کورونا وائرس سے جاں بحق شخص کی میت نہ ملنے پر ورثا نے کیا کیا؟ انتہائی افسوسناک خبر

کورونا وائرس سے جاں بحق شخص کی میت نہ ملنے پر ورثا نے کیا کیا؟ انتہائی ...
کورونا وائرس سے جاں بحق شخص کی میت نہ ملنے پر ورثا نے کیا کیا؟ انتہائی افسوسناک خبر

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق ہونے والے شخص کی میت نہ ملنے پر مرنے والے کے ورثا نے کراچی کے جناح ہسپتال پر دھاوا بول دیا اور جو چیز سامنے نظر آئی اسے توڑدیا۔

ڈان نیوز کے مطابق ورثا میت کی تدفین خود کرنا چاہتے تھے تاہم حکومتی پالیسی کی وجہ سے ہسپتال انتظامیہ نے میت ورثا کے حوالے کرنے سے معذرت کر لی جس پر ہنگامہ آرائی ہوئی۔ ہنگامہ آرائی کے دوران ورثا نے آئسولیشن وارڈ پر دھاوا بول دیا اور وارڈ سے میت لے جانے میں کامیاب ہوگئے تاہم اس وقت تک رینجرز پہنچ گئی جس کے بعد میت کو واپس وارڈ منتقل کردیاگیا جبکہ پولیس نے 8سے 9افراد کو حراست میں لے لیا۔

رپورٹ کے مطابق آئیسولیشن وارڈ میں کووِڈ 19 کے مریض زیر علاج تھے، ویڈیوز میں دیکھا گیا کہ حملے کے بعد شیشوں کے ٹکڑے، فرنیچر اور پنکھے زمین پر پڑے ہیں جبکہ کاؤنٹر پر نصب شیشے کی کھڑی بھی توڑ دی گئی۔ڈاکٹر سیمی جمالی کے مطابق  ’واقعے میں کوئی فرد زخمی نہیں ہوا لیکن ہجوم نے دروازے، کھڑکیاں، چھت کے پنکھے، میزیں، کمپیوٹرز اور جو کچھ ان کے ہاتھ لگا توڑ دیا۔‘

ڈان سے بات کرتے ہوئے جے پی ایم سی کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر سیمی جمالی نے بتایا کہ ہسپتال میں پولیس اور رینجرز کو بلانے کے بعد کم از 8 سے9 افراد کو گرفتار کیا گیا۔

جے پی ایم سی کی ایگذیکٹو ڈائریکٹر سیمی جمالی نے ڈان کو بتایا کہ آٹھ سے نو افراد کو گرفتار کیاگیاہے،پولیس چاہتی ہے ہسپتال مقدمے کی درخواست دے تو گرفتار افراد کیخلاف  ایف آئی آرکاٹی  جائے تاہم انہوں نے کہا وہ نہیں چاہتیں کل کو یہ لوگ ان کے گھروں پر دھاوا بولیں، یہ سرکاری عمارت ہے اور اس کو سکیورٹی دینا ریاست کی ذمہ داری ہے۔

ڈاکٹر سیمی نے کہا حکومت کو چاہیے کہ وہ میتوں کو ورثا کی حوالگی سے متعلق پابندی پر نظر ثانی کرے۔ ڈاکٹر سیمی جمالی نے کہا کہ ’میں تجویز دوں گی کہ ہمیں مرنے والے کے اہلِ خانہ کو اسے دیکھنے کی اجازت نہ دینے کی پالیسی پر دوبارہ سوچنا چاہیئے، وہ کسی کے پیارے ہیں، اہلِ خانہ کو مکمل حفاظتی لباس مہیا کر کے میت کا غسل اور تدفین کرنے دی جائے‘۔

اس صورتحال کو ہر ایک کے لیے جذباتی طور پر چیلنجنگ کہتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’میں عوام سے درخواست کروں گی کہ اس طرح ہسپتالوں میں توڑ پھوڑ نہ کریں کیوں کہ ڈاکٹرز آپ کے لیے اپنی زندگی کو خطرے میں ڈال رہے ہیں‘۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -کورونا وائرس -