”وفاقی وزیر سرو ر خان نے اس چیز کی مخالفت کی تو ان کے خلاف حکومت نے نیب میں انکوائری شروع کر وا دی گئی “سینئر صحافی نے سب سے بڑا دعویٰ کر دیا

”وفاقی وزیر سرو ر خان نے اس چیز کی مخالفت کی تو ان کے خلاف حکومت نے نیب میں ...
”وفاقی وزیر سرو ر خان نے اس چیز کی مخالفت کی تو ان کے خلاف حکومت نے نیب میں انکوائری شروع کر وا دی گئی “سینئر صحافی نے سب سے بڑا دعویٰ کر دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )نیوز اینکر ڈاکٹر دانش نے کچھ عرصہ قبل پی آئی اے کے نیویارک میں واقع تاریخی ہوٹل ” روز ویلٹ “ کو لے کر کچھ انکشافات کیے تھے تاہم اب وہ ایک مرتبہ پھر سے میدان میں آ گئے ہیں اور انہوں نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق ڈاکٹر دانش نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ”وفاقی وزیر ایوی ایشن غلام سرور خان نے روز ویلٹ ہوٹل کو لیز پر دینے کی مخالفت کی تو پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے نیب کے ذریعے ان کے خلاف تحقیقات کا آغاز کر دیاہے ۔“

اپنے اگلے پیغام میں ڈاکٹر دانش کا کہناتھا کہ ”پچھلی حکومتوں پر صرف کرپشن کے الزامات لگے لیکن پی ٹی آئی واحد ہے جس پر کرپشن کےساتھ نااہلیت کاالزام بھی ہے،ملک کے لیے کرپشن سے زیادہ خطرناک چیزنااہلیت ہے۔“

ان کا کہناتھا کہ ” آخر عمران خان روز ویلٹ ہوٹل جو فائدے میں چل رہا ہے اسے اپنے کس دوست کو بیچنا چاہتے ہیں ، ؟ رکاوٹ پر پہلے سیکریٹری شاہ رخ نصرت کو نکالا اب منسٹر سرور خان کے خلاف کارروائی شروع کر دی گئی ۔“

یاد رہے کہ تین روز قبل ڈاکٹر دانش نے اسی معاملے سے متعلق ٹویٹ کیے تھے جن میں ان کا کہناتھا کہ ” پی آئی اے کے قیمتی ترین اثاثے روز ویلٹ ہوٹل نیورک کو لیز پر دینے کی ساز ش تیار ؟ عمران خان کے قریبی دوست اور موجودہ حکومت کے ایک معاون خصوصی بیک گراونڈ میں ا س کے خریدار ہیں۔

ڈاکٹر دانش نے اگلے پیغام میں بات کو آگے بڑھاتے ہوئے سوالیہ انداز میں لکھا کہ ” سابق سیکریٹری ایوی ایشن شاہ رخ کو بائی پاس کرکے اس ہوٹل کو لیز کرنے کا فیصلہ ؟ رکاوٹ بننے پر شاہ رخ کو وزیراوعظم نے ان کے عہدے سے معاون خصوصی کے کہنے پر ہٹا دیا۔“

سینئر صحافی نے مزید کہا کہ” اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں سابق سکریٹری ایوی ایشن شار خ نے اس کی مخالفت کی تھی ، اجلاس کی منٹس آف میٹنگ میں ان کی مخالفت کار ریکارڈ موجود ہے۔“

ڈاکٹر دانش کے مطابق ”بہت جلد نجکاری کمیشن کا اندرونی اجلاس ہو گا جس میں روز ویلٹ ہوٹل کولیز پر دینے کی سازش ہو گی ، سازش کے پیچھے وزیراعظم عمران خان کے ایک دوست اور ایک حکومتی معاون خصوصی شامل ہیں۔“انہوں نے کہا کہ ”قانون کے مطابق پی آئی اے کے سی ای او ارشد ملک روز ویلٹ ہوٹل نیویارک اور سکرائب ہوٹل فرانس کے چیئرمین نہیں ہیں اس لیے وہ براہ راست ہوٹل بیچنے کی سمری نہیں بھیج سکے۔“

مزید :

قومی -