لاک ڈاﺅن کے باعث گھروں پر بیٹھے لوگ انٹرنیٹ پر کیا تلاش کرنے لگے؟ شرمناک انکشاف سامنے آگیا

لاک ڈاﺅن کے باعث گھروں پر بیٹھے لوگ انٹرنیٹ پر کیا تلاش کرنے لگے؟ شرمناک ...
لاک ڈاﺅن کے باعث گھروں پر بیٹھے لوگ انٹرنیٹ پر کیا تلاش کرنے لگے؟ شرمناک انکشاف سامنے آگیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) لاک ڈاﺅن کے سبب گھروں میں فارغ بیٹھے لوگوں کی سرگرمیوں کے متعلق ایک شرمناک انکشاف سامنے آ گیا ہے۔میل آن لائن کے مطابق برطانیہ میں لاک ڈاﺅن کے دوران آن لائن سرچنگ کے ڈیٹا سے انکشاف ہوا ہے کہ فحش مواد اور ففٹی شیڈز آف گرے جیسی فلمیں سرچ کرنے کی شرح میں ہوشربا اضافہ ہو گیا ہے۔ برطانیہ کے مختلف حصوں میں محبت اور جنسیت کی کہانیوں پر مبنی ففٹی شیڈز آف گرے جیسی شرمناک فلموں کی تلاش میں لاک ڈاﺅن کے دوران 154فیصد اضافہ ہوا ہے۔

’ری بوٹ آن لائن ‘ نامی سائبر سکیورٹی فرم کے ماہرین کا کہنا ہے کہ فحش فلموں کے بعد رومانوی ناولوں کی تلاش میں دوسرے نمبر پر سب سے زیادہ اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ لاک ڈاﺅن کے دنوں میں معروف مصنف جیلی کوپر کے رومانوی ناولوں کی تلاش میں 133فیصد اضافہ ہوا۔ اس کے علاوہ جنسیت اور شہوت انگیزی پر مبنی ناولوں کی تلاش میں 82فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا۔اس فحش مواد کی تلاش میں سب سے زیادہ اضافہ مشرقی انگلینڈ میں ہوا۔ دوسرے نمبر پر ویلز کے لوگوں نے سب سے زیادہ ایسے مواد کی تلاش کی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -