عید کے چاند کا تنازعہ، کیا روزہ اور اعتکاف کی قضا درست ہے؟ معروف عالم دین نے واضح کردیا

عید کے چاند کا تنازعہ، کیا روزہ اور اعتکاف کی قضا درست ہے؟ معروف عالم دین نے ...
عید کے چاند کا تنازعہ، کیا روزہ اور اعتکاف کی قضا درست ہے؟ معروف عالم دین نے واضح کردیا
سورس:   Facebook

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) عید کا چاند دیکھنے کا جو ہنگامہ ہوا اس پر مفتی منیب الرحمان نے اعلان کر دیا تھا کہ رویت ہلال کمیٹی نے غلط فیصلہ کیا اور روزے کی بجائے عید کا اعلان کر دیا۔ انہوں نے قوم سے کہا کہ وہ ایک قضا روزہ رکھیں۔ تاہم وزیراعظم عمران خان کے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی مولانا طاہر اشرفی اس معاملے پر سامنے آ گئے اور مفتی منیب الرحمان کے موقف کی نفی کر دی۔ ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق مولانا طاہر اشرفی نے کہا کہ ”عید کے اعلان کے تناظر میں رویت ہلال کمیٹی کا فیصلہ بالکل درست تھا اور قوم کو قضا روزہ رکھنے کی ضرورت نہیں ہے۔“

مولانا طاہر اشرفی نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر ایک ٹویٹ میں عید کے روز چاند کی تصویر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ”آج اس وقت تک چاند نظر آ رہا ہے، جس سے معلوم ہوا کہ رویت ہلال کمیٹی کا فیصلہ درست تھا۔ تاخیر شہادتوں کو شرعی ہدایات کے مطابق دیکھتے ہوئے تاخیر ہوئی۔ لہٰذا روزہ کی نہ قضاءہے اور نہ اعتکاف دوبارہ کرنا ہے۔“واضح رہے کہ مفتی منیب نے کہا تھا کہ وہ جمعہ 14مئی کو قضا روزہ رکھیں گے۔ انہوں نے عوام سے کہا تھا کہ وہ اگلے ماہ رمضان سے قبل گرمیوں یا سردیوں میں جب چاہیں ایک روزے کی قضا پوری کر سکتے ہیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -