آشیانہ ہاؤسنگ سوسائٹی، رپٹ کا ریکارڈ پیش نہ کرنے پر سی سی پی لاہور کو نوٹس

  آشیانہ ہاؤسنگ سوسائٹی، رپٹ کا ریکارڈ پیش نہ کرنے پر سی سی پی لاہور کو نوٹس

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)احتساب عدالت نے آشیانہ اقبال ہاؤسنگ سوسائٹی کیس میں پولیس چوکی میں فائلز کے جلنے اور گمشدگی بارے دائر 2017 کی رپٹ کا ریکارڈ پیش نہ کرنے پر سی سی پی لاہور کو نوٹس جاری کر دیا_ احتساب عدالت نمبر پانچ کے جج ساجد علی اعوان نے کہا پر سماعت کی شہباز شریف کی وکیل چوہدری نواز نے وزیر اعظم شہباز شریف کی ایک دن کی حاضری معافی کی درخواست دائر کی جیسے عدالت نے منظور کر لیا جبکہ شریک ملزم سابق ڈی جی ایل ڈی احد چیمہ اور دیگر ملزمان نے پیش ہو کر حاضری مکمل کرائی عدالت نے آشیانہ اقبال ریفرنس میں مزید سماعت 21 تک ملتوی کر دی،عدالت نے آشیانہ اقبال کی فائلز جلنے اور گم ہونے سے متعلق پولیس رپٹ کا ریکارڈ منگوایا تھا آشیانہ اقبال کا ریکارڈ جلنے اور گم ہونے سے 2017 میں تھانہ برکی کی آشیانہ اقبال چوکی میں رپٹ درج کرائی گئی تھی رپٹ کا ریکارڈ پیش نہ ہونے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا عدالت کو بتایا گیا کہ اس واقعہ کی ایف آئی آر درج نہیں ہوئی تھی صرف سادہ درخواست ائی اور رپٹ دائر ہوئی تھی مگر اب اس رپٹ کا ریکارڈ نہیں مل رہا ہوم ڈیپارٹمنٹ کی لاء  افسر ارم شہزادی نے پیش ہو کر بتایا کہ ریکارڈ نہیں مل رہا تلاش جاری ہے مہلت دی جائے اس پر عدالت نے سی سی پی او لاہور کو نوٹس جاری کر دیا اور ائندہ سماعت پر رپٹ کا ریکارڈ پیش ہونے کا حکم دیا۔

مزید :

علاقائی -