منی لانڈرنگ کیس، شہباز شریف، حمزہ شہبازپر فرد جرم عائد نہ ہوسکی

منی لانڈرنگ کیس، شہباز شریف، حمزہ شہبازپر فرد جرم عائد نہ ہوسکی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)سپیشل جج سینٹرل میں وزیراعظم شہباز شریف اور وزیراعلی حمزہ شہباز پر منی لانڈرنگ کے مقدمے میں فرد جرم عائد نہ ہو سکی،عدالت نے ملزمان کی عبوری ضمانتوں میں اکیس مئی تک توسیع کردی۔سپیشل سینٹرل کورٹ کے جج اعجاز اعوان نے کیس کی سماعت کی،وزیراعظم شہبازشریف عدالت پیش نہیں ہوئے اور انکے وکلا نے حاضری معافی کی درخواست دائر کی جس میں موقف اختیار کیا کہ شہبازشریف نجی دورے پر لندن ہیں وہ کینسر کے مریض ہیں انکا طبی معائنہ کیلئے ڈاکٹر نے وقت دیا ہے، انہیں متحدہ عرب امارات کے صدر کی رحلت پر تعزیت کیلئے دبئی بھی جانا ہے،حاضری معافی درخواست منظور کی جائے،دوران سماعت ایف آئی اے کے پراسیکیوٹر نے موقف اختیار کیا کہ اگر شہباز شریف کے طبی معائنے کا معاملہ ہے تو حاضری معافی کی درخواست کی مخالفت نہیں کریں گے  دوران سماعت  وزیراعظم کے وکیل امجد پرویز نے اپنے دلائل میں کہا کہ دیکھنا ہے کہ فرد جرم عائد ہوسکتی ہے یا نہیں کسی گواہ نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے خلاف بیان نہیں دیا منی لانڈرنگ کا الزام لگا کر 25 ارب روپے کی ایف آئی آر کاٹی گئی،عدالت نے استفسار کیا کہ کیس کی تفتیش مکمل ہو چکی ہے یا چل رہی ہے جس پر پراسیکیوٹر نے موقف اختیار یا کہ وہ پہلی بار پیش ہوئے ہیں کیس کے فیکٹس کے بارے میں مکمل علم نہیں ہے،عدالت نے وزیراعظم شہباز شریف کی حاضری معافی درخواست منظور کرتے ہوئے ملزمان کی عبوری ضمانتوں میں 21 مئی تک توسیع کردی۔  دوسری جانب احتساب عدالت لاہور نے وزیراعظم شہباز شریف کو طلب کر لیا آئندہ سماعت پر وزیراعظم شہباز شریف عدالت میں پیش ہو جائیں گے،وکیل کی عدالت کو یقین دہانی.احتساب عدالت نمبر دو کے جج نے شہباز شریف فیملی منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کی وزیراعظم شہباز شریف کی جانب سے حاضری معافی کی درخواست جمع کروائی گئی، حاضری معافی کی درخواست منظور کی جائے،وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے حاضری مکمل کروائی،عدالت نے شہباز شریف کے وکیل کو ہدایت کی کہ ان کی مستقل حاضری معافی اور پلیڈر مقرر کیا جائے،آئندہ سماعت پر شہباز شریف پیش ہو کر اپنا پلیڈر مقرر کریں،شہباز شریف کے وکیل نے عدالت کو یقین دہانی کروائی کہ آئندہ سماعت پر شہباز شریف پیش ہو جائینگے،عدالت نے شہباز شریف کی حاضری معافی کی درخواست منظور کرتے ہوئے سماعت 25 مئی تک ملتوی کردی

منی لانڈرنگ

مزید :

صفحہ آخر -