آر ایم جی سی گارمنٹس سینٹرز ملازمین کا مستقلی کا مطالبہ 

  آر ایم جی سی گارمنٹس سینٹرز ملازمین کا مستقلی کا مطالبہ 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) آر ایم جی سی ریڈی میڈ گارمنٹس سینٹرز کے ملازمین نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اے ڈی پی ملازمین کو مستقل کرنے کے حوالے سے جائزہ لینے کیلئے بنائی گئی اعلیٰ سطح کی کمیٹی میں انکے پراجیکٹ کو بھی شامل کر کے جائزہ لیا جائے اور انہیں انصاف فراہم کیا جائے کیونکہ یہ پراجیکٹ بھی اے ڈی پی کے زمرے میں آتا ہے بصورت دیگر احتجاجی دھرنوں پر مجبور ہو جائینگے آر ایم جی سی کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے و الے ملازمین طاہر شاہ اور دیگر نے بتایا کہ بیس سالوں سے مختلف اضلاع میں قائم ان سینٹرز میں ملازمین کام کر رہے ہیں جن میں 109ملازمین ہیں اور زیادہ تر ان میں خواتین ہیں جو خواتین کو ہنر سکھا کر ترقی کا راستہ فراہم کرتی آرہی تھی ان سینٹرز کا مقصد گھریلو اور تعلیم یافتہ خواتین کو سلائی کھڑائی سکھانے کیلئے فراہم کرنا اور کاروبار کرنے کیلئے مواقع پیدا کرنا تھا تاکہ یہ خواتین اپنے گھروں کی بنیادی ضروریات پوری کرنے میں بھرپور کردار ادا کر سکیں۔انہوں نے کہا کہ بد قسمتی سے یہ پراجیکٹ جون 2021میں ختم ہوا جسکی وجہ سے ملازمین بے روزگار ہوئے اور عرصہ دراز سے اس پرجیکٹ میں کام کرنیوالے زیادہ تر ملازمین اوور ایج ہو چکے ہیں جن کو دوسری جگہ ملازمت بھی نہیں مل سکتی اور متعدد بار اپنی آواز صوبائی حکومت کو پہنچائی لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔انہوں نے کہا کہ ان کا پراجیکٹ بھی اے ڈی پی پراجیکٹ کے زمرے میں آتا ہے لہٰذا صوبائی حکومت سے مطالبہ ہے کہ اے ڈی پی ملازمین کی مستقلی کا جائزہ لینے کے سلسلے میں قائم کر دہ اعلیٰ سطح کمیٹی میں ان کا پراجیکٹ بھی شامل کر کے انہیں انصاف فراہم کیا جائے بصورت دیگر احتجاج پر مجبور ہو جائینگے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -