رشتہ دار جائیداد ہتھیانے کیلئے قتل کی دھمکیاں دے رہے ہیں 

  رشتہ دار جائیداد ہتھیانے کیلئے قتل کی دھمکیاں دے رہے ہیں 

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ) مانکی شریف سے تعلق رکھنے والے سلیمان کا کہنا ہے میرے رشتہ دار میری ملکیتی جائیداد مجھ سے ہتھیانے کے لیے مجھے قتل کی دھمکیاں دے رہے ہیں،طارق آباد چوکی کے پولیس مجھے تحفظ فراہم کرنے کے بجائے ٹال مٹول سے کام لے رہے ہیں،میرے اور میرے بچوں کی جان کو خطرہ ہیں، مجھے انصاف نہیں مل رہا،اگر مجھے یا میرے بچوں کو کچھ ہوگیا تو ذمہ دار قانون نافذ کرنے والے ادارے ہونگے،ان خیالات کا اظہار نوشہرہ کے علاقے مانکی شریف کے رہائشی سلیمان نے میڈیا کو فریاد کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ نوشہرہ کے علاقے معراجی میں ایک کنال اراضی پر محیط میرا ملکیتی گھر ہے،جبکہ گھر کے قریب میرے مامووں کی زمین ہے جس کی تقسیم میرے والد کے ساتھ کی گئی تھی،لیکن اب میرے رشتہ دار اب اس تقسیم نہیں مان رہے ہیں اور کہتے ہیں کہ ہمارے ساتھ دوبارہ جائیداد کی یقسیم کریں،جس جگہ کی تقسیم کی بات میرے رشتہ دار کررہے ہیں اس میں ایک سائڈ پر میرے والد کا قبر ہے اور دوسری سائیڈ پر پانی کا کنواں ہے،میرے رشتہ دار مجھے دھمکیاں دیکر کہتے ہیں کہ اپنے والد کو کہی اور لے جاکر دفن کرو،اور ہمارے ساتھ گھر اور زمین کی تقسیم کرو،متاثرہ شخص سلیمان نے کہا کہ اس پر میں نے اعتراض کیا تو میرے رشتہ داروں نے میرے گھر میں اسلحہ کے ساتھ گھس کرمجھے اور میرے بیوی بچوں کو یرغمال بنا کر مجھ پر شدید تشدد کیا،جس کے ثبوت میرے پاس ہیں،اور یہ دھمکی دیکر چلے گئے کہ اگر کسی کو کچھ بتایا تو ہم آپ کو آپ کے بیوی بچوں سمیت قتل کردینگے،سلیمان نے کہا کہ ڈر کے مارے میں کافی عرصہ خاموش رہا،انہوں نے کہا کہ میں ڈر کی وجہ سے علاقہ معراجی سے مانکی شریف منتقل ہوگیا ہوں اور کرائے کہ گھر میں رہ رہا ہوں۔میں پولیس نے میں چند دن پہلے رپورٹ درج کروائی تو باآثر رشتہ داروں نے ضمانت کروادی،اوتر ضمانت کے بعد میرے رشتے دار ناصر،شاہد،باسط،سکندر اور فواد نے جس نے پہلے مجھ پر اور میرے بیوی بچوں پر حملہ بھی کیا تھا اور ہم کو گھر میں یرغمال بنا کر مجھ پر تشدد بھی کیا تھا اب پھر سے مجھے اور میرے بیوی بچوں کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے لگے ہیں متاثرہ شخص سلیمان نے کہا کہ میں نے مقامی پولیس چوکی طار ق آباد میں کملپلینٹ درج کی تو پولیس نے مجھے تحفظ دینے کے بجائے ٹال مٹول سے کام لینے لگے،متاثرہ شخص سلیمان نے ڈ ی پی او نوشہرہ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ مجھے انصاف فراہم کی جائے مجھے اور بیوی بچوں کی جان کو خطرہ ہے اور اگر مجھے انصاف نہیں ملا اور مجھے اور میرے بیوں بچوں کو کچھ ہوگیا ذمہ دار قانون نافذ کرنے والے ادارے ہونگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -