بہاولپور، پولیس تشدد سے شہری جاں بحق، زہر بھی دینے کا انکشاف 

بہاولپور، پولیس تشدد سے شہری جاں بحق، زہر بھی دینے کا انکشاف 

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ بیورو،نامہ نگار)بزرگ شہری کولڑائی چھڑانامہنگی پڑگئی پولیس نے فائرنگ کے الزام میں گرفتار کرکے(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

 آٹھ دن تک تشدد کرتی رہی حالت غیرہونے پرزہردیدیا، ہلاکت کے بعد بہاول وکٹوریہ ہسپتال لے آئے اصل ملزمان آزاد ہیں ہمارے بزرگ کوبے گناہ مارڈالا ہے متاثرین نے بہاول وکٹوریہ ہسپتال کے سامنے سرکلرروڈ بلاک کرکے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ انتظامیہ کے حکم پرڈاکٹروں نے نعش پوسٹ مارٹم کیلئے بھجوادی تفصیل کے مطابق بستی رڈاں بہاولپورکے درجنوں مکینوں نے سرکلرروڈ ٹائرجلاکرٹریفک جام کردی اورتھانہ کینٹ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے بتایاکہ چندروزقبل ان کے علاقہ میں دوگروہوں میں لڑائی جھگڑاہوا ان کے بزرگ محمداصغرلڑائی چھڑانے کیلئے گئے تو مخالف گروپ نے پولیس کوان کانام بھی لکھوادیاجس پرپولیس نے فائرنگ کے اصل ملزمان گرفتار کرنے کی بجائے ان کے بزرگ کوگرفتار کرلیااوراسلحہ برآمد کرنے کے نام پر8 دن تک تشدد کرتے رہے انہوں نے الزام لگایاکہ بزرگ محمداصغرکی حالت خراب ہونے پراسے زہر دے کرہلاک کردیا گیاہے۔ انہوں نے ایس ایچ اوتھانہ کینٹ اوردیگرپولیس افسران کیخلاف روڈ بلاک کرکے نعرے بازی کی اورپولیس کیخلاف قتل کامقدمہ درج کرنے کامطالبہ کیاادھربی وی ایچ انتظامیہ نے نعش قبضہ میں لے کرپوسٹ مارٹم کی کاروائی شروع کردی ہے۔ متاثرہ خاندان نے وزیراعلی پنجاب اوردیگرارباب اختیار سے سخت نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے۔اس سلسلہ میں پولیس ترجمان نے کہاکہ قتل کے مقدمہ میں ملزم شامل تفتیش تھا دل کادورہ پڑنے کی وجہ سے ہلاکت ہوئی ہے۔ پولیس تشدد اورزہردینے کاالزام بے بنیاد ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -