شہد کی مکھی کے کاٹنے سے نئے نویلے دلہے کی موت ہوگئی

شہد کی مکھی کے کاٹنے سے نئے نویلے دلہے کی موت ہوگئی
شہد کی مکھی کے کاٹنے سے نئے نویلے دلہے کی موت ہوگئی

  

قاہرہ (ویب ڈیسک) مصر میں ایک نوجوان شہد کی مکھی کے زہریلے ڈنک سے پہلے کومے میں چلا گیا اور بعد ازاں موت کے منہ میں چلا گیا،  32 سالہ نادر الجزار کی حال ہی میں شادی ہوئی تھی، اس نے ایک فارم ہاؤس کرائے پر حاصل کیا تھا جہاں وہ مختلف اقسام کی اجناس کا ذخیرہ کر کے انھیں مارکیٹ میں فروخت کرنے کا کام کرتا تھا۔

"اے آر وائی نیوز" کے مطابق فارم ہاؤس کے معائنے کے دوران اسے شہد کی مکھی نے کاٹ لیا، طبیعت بگڑنے پر اسے فوری طور پر قریبی ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے طبی معائنہ کرنے کے بعد فوری امداد فراہم کی مگر وہ کومے میں چلا گیا۔نادرالجزار کی جان بچانے کی تمام کوششیں ناکام ثابت ہوئیں، شہد کی مکھی کا زہر اس کے جسم میں پھیل چکا تھا جس سے اس کی ہلاکت ہوئی۔

بعد ازاں انکشاف ہوا کہ نوجوان ایک قسم کی الرجی کا مریض تھا جس کی وجہ سے شہد کی مکھی کا زہر اس کے لیے جان لیوا بن گیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -