گاندربل جعلی مقابلہ کے مقدمے میں سابق ایس پی پریہارسمیت 5ملزمان پرفرد جرم عائد

گاندربل جعلی مقابلہ کے مقدمے میں سابق ایس پی پریہارسمیت 5ملزمان پرفرد جرم ...

سرینگر(اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں پرنسپل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بانڈی پورہ نے گاندربل جعلی مقابلے کے مقدمے میں سابق ایس پی ہنس راج پریہار سمیت 5ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی ہے ۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پرنسپل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج حق نواز نے 6برس سے جاری گاندربل جعلی مقابلے کے مقدمے کی سماعت کے دوران اس وقت کے سپریٹنڈنٹ آف پولیس ہنس راج پریہار سمیت کیس کے بنیادی 5ملزمان کے خلاف فرد جرم عائد کردی ہے اور استغاثہ کواس واقعے سے متعلق شواہد اور ثبوت عدالت میںپیش کرنے کی ہدایت کی۔اس موقع پر وکیل دفاع کی جانب سے ملزمان کو بے گناہ قرار دینے کیلئے دلائل پیش کئے تاہم عدالت نے استغاثہ کے دلائل اور بنیادی شواہد سے اتفاق کرتے ہوئے کیس کی باضابطہ سماعت شروع کرنے کی ہدایات صادر کیں۔مقدمے کی آئندہ سماعت27نومبر کو ہوگی۔

واضح رہے کہ غلام نبی وانی ولد غلام قادر ساکن نوبگ کوکر ناگ کو ایس او جی گاندربل جس کی سربراہی ایس پی ہنس راج پریہار کررہے تھے ،نے حراست میں لیا اور بعد میںغلام نبی وانی کو عسکریت پسند قراردیتے ہوئے ایک جعلی مقابلے کے دوران قتل کر دیا گیا تھا ۔اس سلسلے میں وکیل استغاثہ محمد حفیظ لون نے عدالت کو بتایا کہ ایس پی ہنس راج پریہار اور اس کے دیگر ساتھیوںنے مجرمانہ سازش کرکے غلام نبی کو سرینگر سے گرفتار کیا اور بعد میں انعام اور ترقی کی لالچ میں ایک جعلی مقابلے کے دوران قتل کر دیا۔ انہوں نے ملزمان کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ۔

مزید : عالمی منظر