یوم عاشورہ آج ملک بھر میں انتہائی مزہبی عقیدت و احترام ساتھ منایا جائے گا

یوم عاشورہ آج ملک بھر میں انتہائی مزہبی عقیدت و احترام ساتھ منایا جائے گا

                    لاہورر(سٹاف رپورٹر/سپیشل رپورٹر)نواسہ رسول حضرت محمدﷺ حضرت امام حسین ؓ کا یوم شہادت آج 10محرم الحرام (ےوم عاشور) جمعہ کو ملک بھر مےں انتہائی مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جائے گا ۔شہدائے کربلا کو بھرپور خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے ملک بھر مےں ہزاروں مقامات پر مجالس عزا ‘ علم اور شبیہ ذوالجناح کے جلوس برآمد ہو نگے جبکہ علماءکرام و ذاکرین واقعہ کربلا کے فضائل و مصائب پر روشنی ڈالیں گے ‘ حضرت امام حسینؓ اور انکے رفقاءکی حق و انصاف اور اسلام کی سربلندی کیلئے عظیم قربانی پر انہیں خراج عقیدت پیش کیا جائے گا۔ لاہور میں ےوم عاشور کا مرکزی شبیہ ذوالجناح کا جلوس قدیم امام بارگاہ نثار حویلی سے گذشتہ رات کو برآمد ہوگیا ےہ جلوس اپنے مقررہ راستوں سے گزرتا ہوا آج نماز مغرب کے وقت کربلا گامے شاہ مےں اختتام پذےر ہو گاجہاں مجلس شام غریباں منعقد ہوگی جس سے علامہ کرامت عباس حیدری خطاب کرینگے۔ جبکہ اس کے علاوہ شہر سے علم اور شبیہ ذوالجناح کے دیگر جلوس بھی مرکزی جلوس مےں شامل ہو جائےں گے ۔ جلوس مےں شامل عزا دار نوحہ خوانی ‘ماتم اور زنجےر زنی بھی کرےں گے ۔جلوس کے مقررہ راستوں پر دودھ اور پانی کی سبےلےں بھی لگائی دی گئی ہیں جبکہ جلوس کے راستوں پر پولےس کی بھاری نفری بھی تعےنات کردی گئی ہے ۔اس سلسلہ میں لاہور کی مرکزی امام بارگاہ کربلا گامے شاہ سمیت صوبائی دارالحکومت کی تمام امام بارگاہوں کی فول پروف سےکورٹی کی ہداےت کی گئی ہے اور اہم و حساس مقامات پر پولےس کے خصوصی دستے تعےنات کئے جائےں گے جبکہ پنجاب کے دےگر اضلاع مےں بھی امام بارگاہوں،مجالس اور ماتمی جلوسوں کی سےکورٹی کے خاطر خواہ انتظامات کئے جا رہے ہےں ، امام بارگاہوں کے داخلی دروازوں پر واک تھرو گیٹ نصب کئے جائےں گے۔اس موقع پر اخبارات مےںبھی سیدالشہدا امام حسینؓ اور شہدائے کربلا کی بے مثال قربانی کے حوالے سے خصوصی ایڈیشن شائع کئے جائےں گے جبکہ رےڈےو اور ٹی وی چےنلز پر شہدائے کربلا کے حوالے سے خصوصی پروگرامز نشر کئے جائےں گے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی طرف سے ےوم عاشور پرمکمل ہم آہنگی اور امن و امان کی فضا ءبرقرار رکھنے کےلئے متعلقہ ڈویژن / اضلاع کے اراکےن قومی و صوبائی اسمبلی اور سینیٹرز کو بھر پور کردار ادا کرنے کی ہداےت کی گئی ہے۔محکمہ اوقاف و مذہبی امور پنجاب کے زیر اہتمام بھی صوبہ بھر میں صوبائی اور زونل مقامات پر خصوصی سیل قائم کئے گئے ہےں جو علماءو مشائخ ¾ عمائدین اور انتظامیہ سے قریبی رابطہ مےں رہےں گے۔ عاشورہمحرم الحرام کے دوران عزا داروں کو بروقت طبی امداد پہنچانے اور ہر قسم کے مریضوں کوعلاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے لاہور ڈویژن کے ہسپتالوں میں خصوصی انتظامات کئے گئے ہےں ۔دریں اثناءہیلی کاپٹرز کے زریعے مجالس اور جلوسوں کی فضائی نگرانی کی جائے گی ۔اور وزیراعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف کو آئی جی پنجاب خان بیگ اورصوبائی وزیر قانون رانا ثناءاللہ لمحہ بہ لمحہ ہاٹ لائن کے زریعے رپورٹ دیں گے۔جبکہ ڈی سی او کمشنر اور ارکان قومی و صوبائی اسمبلی مرکزی کنٹرول روم میں بیٹھ کر جلوس کے روٹس کی مانیٹرنگ کریں گے اور اپنی لمحہ بہ لمحہ رپورٹس سے وزیر اعلی پنجاب کو آگاہ کرتے رہیں گے۔اور حکومتی وزراءضلعی انتظامیہ کے ساتھ مل کر روٹس کے راستوں میں آ¸ے والے امام بارگاہوں کا دورہ کریں گے اور امام بارگاہوں کے منتظمین سے بھی مل کرفول پرو ف سکیورٹی کو ممکن بنائیں گے۔ علا وہ ازےںحضرت امام حسین ؓ کی یوم شہادت کے سلسلہ میں لاہور میں9محرم الحرام کے موقع پر صوبائی دارلحکومت لاہور کے مختلف مقامات پر شبیہ و ذوالجناح کے جلوس نکالے گئے۔ کرشن نگر پانڈو سٹریٹ سے زیارت 9محرم کی صبح10بجے نکالی گئی جو کہ شام غروب آفتاب سے قبل پرانی انارکلی سے ہوتی ہوئی واپس پانڈو سٹریٹ پہنچ کر اختتام پذیر ہو گئی جبکہ امام بارگاہ قصر بتول شادمان سے بھی شبیہ و ذوالجناح کا جلوس نکالا گیا۔ لاہور میں اس سلسلہ میں ہونے والی تمام تقریبات غروب آفتاب سے قبل ختم کرنا ہوں گی ،تفصیلات کا مطابق حضرت امام حسینؓ کی یوم شہادت کے موقع پرلاہور میں سب سے بڑا ذوالجناح کا جلوس نثار حویلی اندرون موچی دروازہ چوک نواب صاحب سے 9محرم جمعرات کی رات 10بجے تقریبانمودار ہوا اس سے قبل اہل تشیع کے معروف سکالر اسد جوہری اور شجر حسین شجر نے حضرت امام حسین ؓ کی سیرت اور واقعہ کربلا پر روشنی ڈالی ۔ذوالجناح کا یہ جلوس اپنے مقررہ روٹ سے ہوتا ہوا نماز فجر سوہابازار رنگ محل میں ادا کرے گا اور غروب آفتاب سے قبل شام 5بجے تک گامے شاہ میں داخل ہو جائے گا جہاں شام غریباں کی تقریب کا آغاز ہوگا،اس سے قبل9محرم کو صبح10بجے کرشن نگر سے ایک زیارت برآمد ہوئی ،اس سے قبل ذاکرین نےشہادت حسین ؓ کے بارے میں لوگوں کو آگا کیا، یہ زیارت کرشن نگر پانڈو سٹریٹ سے نکل کر اپنے مقررہ روٹ سے ہوتی ہوئی پرانی انارکلی خیمہ سادات پہنچی پھر یہاں سے اسی روٹ پر واپسپانڈو سٹریٹ پہنچ کر ختم ہوگئی۔جلوس کے دوران انتہائی سخت سیکیورٹی کے انتظامات کئے گئے تھے، ذوالجناح کے جلوس میں شرکت کت لئے آنے والے تمامزائرین کی نہ صرف تلاشی لی گئی بلکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کے لئے ان کی مکمل مانیٹرنگ بھی کی گئی ۔

ےو م عا شو ر

مزید : صفحہ اول