جائیداد کے تنازع پر بیٹا‘ غیرت کے نام پر شادی شدہ شخص قتل 

    جائیداد کے تنازع پر بیٹا‘ غیرت کے نام پر شادی شدہ شخص قتل 

  



وہاڑی‘ میلسی (بیورورپورٹ‘ نمائندہ خصوصی‘ سپیشل رپورٹر) مختلف واقعات میں 2افراد کو قتل کردیا گیا تفصیل کے مطابق   پولیس تھانہ ٹھینگی کی حدود چکنمبر76 ڈبلیو بی میں جائیداد کے تنازعہ پر جھگڑے کے دروان اسلم سندھو نامی شخص نے فائرنگ کرکے اپنے بیٹے سلیم کو قتل کردیا ذرائع کے مطابق  (بقیہ نمبر36صفحہ7پر)

اسلم سندھو32ایکڑزرعی رقبہ کامالک ہے اس نے اپنے زرعی رقبہ میں سے کچھ رقبہ اپنے بیٹے سلیم اوردیگردوبیٹوں کے درمیان تقسیم کردیا تھا اور12ایکڑرقبہ اپنے زیراستعمال رکھامقتول کافی عرٖصہ سے اپنے باپ سے 12ایکڑمیں سے مزیدزمین حاصل کرناچاہتاتھالیکن باپ انکاری تھااورآئے روزان کے درمیان لڑائی جھگڑاجاری رہتاتھااوربیٹاسلیم باپ کوقتل کرنے کی دھمکیاں بھی دیتارہتاتھاگزشتہ روزبھی دونوں کے درمیان شدیدتلخ کلامی ہوئی جس پر باپ اسلم نے فائرنگ کرکے بیٹے سلیم کو قتل کردیا اور موقع سے فرار ہوگیاواقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس تھانہ ٹھینگی نے موقع پر پہنچ کر نعش تحویل میں لے لی اور پوسٹمارٹم کیلئے ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کردیا ملزمان کے خلاف مقدمہ نمبر467/19درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی  جبکہ   متروکے رہائشی 40 سالہ شادی شدہ محمد شہزاد کے مبینہ طور پر قریبی چک کے رہائشی ایک خاتون سے ناجائز تعلقات تھے وقوعہ کی شب محمد شہزاد عبد اللہ کالونی میں اپنی محبوبہ سے ملنے کیلئے گیا تو خاتون کے رشتہ داروں نے اسے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا اور سر عام ڈنڈوں سوٹوں اور آہنی آلات سے اسے تشدد کا نشانہ بنا ڈالا جسے مخدوش حالت میں ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال وہاڑی پہنچایا گیا اس وقوعہ بارے متاثرہ شخص کے والد محمد شریف نے پولیس تھانہ مترو میں اپنے بیٹے کو تشدد کا نشانہ بنانے پر محمد عامر ممرا، محمد امیر ممرا، محمد قیصر اور دیگر دو نامعلوم افراد کے ہمراہ مقدمہ نمبر866/19 درج کرایا تا ہم گذشتہ روز بہیمانہ تشدد کا نشانہ بننے والا محمد شہزاد ہسپتال میں دم توڑ گیا، غیرت کے نام پر ہونے والے اس قتل پر مترو کے شہری سراپا احتجاج بن گئے اور واقعہ کیخلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے روڈبلاک کر دیا اور ٹائر جلا کر پولیس کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے ملزموں کیخلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

قتل 

مزید : ملتان صفحہ آخر