نشتر کے بیشتر ڈاکٹر تنخواہوں سے محروم

  نشتر کے بیشتر ڈاکٹر تنخواہوں سے محروم

  



ملتان (وقائع نگار )نئے پاکستان میں سرکاری ہسپتالوں میں ڈاکٹرز بغیر تنخواہ کے کام کرنے پر مجبور،پاکستان میڈیکل(بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

ایسوسی ایشن کی جانب سے متعدد بار سیکرٹری ہیلتھ کو حالات سے آگاہ کرنے کے باوجود معاملات جوں کے توں,تفصیل کے مطابق نئے پاکستان میں ڈاکٹرز کو اب اپنی تنخواہوں کے لئے مہینوں انتظار کرنے کی اذیت سے گزرنا پڑتا ہے،نشتر ہسپتال میں کام کرنے والے 46 پوسٹ گریجویٹ ڈاکٹرز ماہانہ مشاہرے سے محروم ہیں جبکہ 31 پی جی آرز ڈاکٹرز کو 5ماہ سے بقایا جات کی ادائیگی نہیں کی جا سکی جبکہ نشتر انسٹیٹیوٹ آف ڈینٹیسٹری کے کے 18 ڈاکٹرز جنہیں گریڈ 18 میں ترقی دے دی گئی تھی انکو تین ماہ سے تنخواہیں جاری نہیں کی گئیں،اس ساری صورتحال سے وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی کی جانب سے بھی سیکرٹری صحت کو بارہا مرتبہ آگاہ کیا گیا جبکہ دوسری جانب پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج کی جانب سے متعدد بار سیکرٹری اسپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کو ملاقات کر کے صورتحال سے آگاہ کیا گیا تاہم اب تک 106ڈاکٹرز اپنی تنخواہوں مشاہرہ اور بقایا جات سے محروم ہیں جبکہ اس حوالے سے پی ایم اے ملتان کے صدر پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج،جنرل سیکرٹری ڈاکٹر رانا خاور۔ڈاکٹر شیخ عبدالخالق،ذوالقرنین حیدر،وقار نیازی اور دیگر کابینہ ممبران کا کہنا تھا کہ وزیر اعلی پنجاب فوری صورتحال کو نوٹس لیں بصرت دیگر انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور ہو جائیں گے۔

تنخواہیں

مزید : ملتان صفحہ آخر