اقلیتوں کی توہین اورانتہا پسندی کے باعث بھارت کا زوال شروع ہو گیا: گورنر پنجاب 

    اقلیتوں کی توہین اورانتہا پسندی کے باعث بھارت کا زوال شروع ہو گیا: گورنر ...

  



لاہور(نمائندہ خصوصی)گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا ہے کہ جو قومیں انتہا پسندی کی طرف جاتی ہیں ان کا زوال شروع ہو جاتا ہے اور بھارتی سپریم کورٹ نے جنونی ہندوؤں کے دباؤ میں آکر بابری مسجد کی جگہ مندر کی اجازت دے کر اقلیتوں کے حقوق کی توہین کی ہے اور وہ دن بھی دور نہیں کہ جب مظلو م کشمیری عوام اپنے مقصد میں کامیاب ہونگے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان نے اپنے حالیہ اقدامات سے دنیا بھر کو باور کرا دیا ہے کہ ہم اقلیتوں کے حقوق(بقیہ نمبر25صفحہ12پر)

 کو مکمل تحفظ دیتے ہیں جو کہ پاکستان کے بانی قائد اعظم کا بھی پیغام ہے اور پاکستان کے عوام بھی باحوصلہ اور دوسروں کے حقوق کا احترام کرنے والے لوگ ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یونیورسٹی آف واہ کے آٹھویں کانووکیشن کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر وائس چانسلر یونیورسٹی آف واہ پروفیسر ڈاکٹر خلیق ا لرحمن شاد، اساتذہ اور فارغ التحصیل ہونے والے طلبا اور طالبات کی کثیر تعداد موجود تھی۔ گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا کہ ملک میں اندرونی سیکیورٹی صورتحال میں بہتری کی وجہ سے شہروں کی رونقیں پلٹ آئی ہیں، اس وقت لاہورکے تمام ہوٹلوں میں کوئی کمرہ خالی نہیں۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم عمرا ن خان کی ہدایت پر یونیورسٹیوں میں بزنس سنٹرز بنانے کیلئے صوبہ بھر کی پبلک اور پرائیویٹ یونیورسٹیوں سے مشاورت شروع کی دی تاکہ ڈگری لینے کے بعد طلبہ سٹرکوں پر نوکریوں کیلئے خوار نہ ہوں۔ وائس چانسلر یونیورسٹی آف واہ پروفیسر ڈاکٹر خلیق الرحمٰن شاد نے کہاکہ 2009میں قیام کے بعد یونیورسٹی نے مختصر مدت میں نمایاں کامیابیاں حاصل کیں اور اس وقت  یونیورسٹی میں نو شعبوں میں تعلیم دی جا رہی ہے۔ 340قابل اور باصلاحیت اساتذہ یونیورسٹی سے وابستہ ہیں۔گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے بعدازاں طلبہ کواسناد دیں۔

گورنر پنجاب

مزید : ملتان صفحہ آخر