معاشی صورتحال کی بہتری کیلئے سخت اقدامات کے نتائج ملنا شروع ہو گئے: عبد الحفیظ شیخ 

معاشی صورتحال کی بہتری کیلئے سخت اقدامات کے نتائج ملنا شروع ہو گئے: عبد ...

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وزیراعظم کے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ ملک میں معاشی صورتحال کو بہتر بنانے کے سخت اقدامات کے نتائج سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں،سٹاک ایکسچینج اور ملکی آمدن میں اضافہ ہوا ہے اور قرضوں اور خسارہ میں واضح کمی آئی ہے۔پیس اینڈ ڈویلپمنٹ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مشیر خزانہ نے کہا کہ موجودہ عالمگیریت کے دور میں کوئی ملک بھی اکیلا ترقی نہیں کرسکتا ہے لہٰذا ترقی و خوشحالی کیلئے دوسروں کے ساتھ شراکت داری کی بنیادی شرط ہے اور ترقی خوشحالی کیلئے کسی بھی ملک کے نجی شعبے کا فعال ہونا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب تک امیر طبقہ اپنے ملک میں سرمایہ کاری نہیں کریگا ملک میں اس وقت تک ترقی ممکن نہیں ہے۔علاوہ ازیں ایک بیان میں مشیر خزانہ نے کہا کہ کسی بھی ملک کی حکومت لاکھوں نوکریاں نہیں دے سکتی جبکہ پاکستان میں سرمایہ کاری کے ماحول سازگار بنا رہے ہیں، تجارت کے فروغ کیلئے طورخم بارڈر کو 24گھنٹے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا، ایران کے ساتھ تجارت کو بھی فروغ دیا جا رہا ہے۔ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ کئی ممالک کے اربوں ڈالر باہر پڑے ہیں جبکہ پاکستان میں سرمایہ کاری لانے کیلئے سازگار ماحول دینا ہو گا۔ مشیر خزانہ نے کہا کہ کسی بھی ملک کی حکومت لاکھوں نوکریاں نہیں دے سکتی ہے جبکہ حکومتیں نوکریوں کے منفی زونز اور نجی اداروں کے فروغ میں مدد فراہم کر سکتی ہے، ملک میں بے روزگاری کے خاتمے کے اقدامات تیز تر کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پر امن اور خوشحال افغانستان کا حامی ہے جبکہ ہم ایران کے ساتھ تجارت بڑھانا چاہتے ہیں جس کیلئے آسانیاں پیدا کر کے سرمایہ کاری کا ماحول فراہم کررہے ہیں۔

 ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ

مزید : صفحہ اول