پسند کی شادی کرنیوالی لڑکی کو اہلخانہ نے عدالت میں آڑے ہاتھوں لیا

پسند کی شادی کرنیوالی لڑکی کو اہلخانہ نے عدالت میں آڑے ہاتھوں لیا

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کے کیس میں پیشی کے لئے آنے والی لڑکی پر اس کے اہل خانہ نے دھاوا بول دیا، لڑکی کی ماں اور بھائیوں نے اسے تشدد کا نشانہ بنایا تاہم پولیس خاتون کو ماں اور بھائیوں کے چنگل سے بحفاظت نکال کرلے گئی،سمن آباد لاہورکی مہوش نے علی رضا سے پسند کی شادی کی،اس بابت انہوں نے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کررکھاتھا،گزشتہ روز لڑکی ہائیکورٹ بیان دینے کے لئے پہنچی تو اس کے اہلخانہ نے اسے پکڑ لیا،لڑکی کی ماں اور بھائیوں نے اسے تشدد کا نشانہ بنایا،جس پر لاہور ہائی کورٹ کے سیکیورٹی اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور انہوں نے لڑکی کی خلاصی کرائی،اس موقع پر مہوش کی ماں بیٹی کو ساتھ لے جانے کے لئے دہائی دیتی رہی،دوسری طرف مہوش کا کہناہے کہ اس نے پسند کی شادی کی،اسے تحفظ چاہیے۔

آڑے ہاتھوں 

مزید : صفحہ آخر