اینٹی کرپشن نے 2ماہ میں 15ارب 62کروڑ 50لاکھ کی لینڈ ریکوری کی: گوہر نفیس

اینٹی کرپشن نے 2ماہ میں 15ارب 62کروڑ 50لاکھ کی لینڈ ریکوری کی: گوہر نفیس

  



لاہور(ارشدمحمود گھمن /سپیشل رپورٹر) ڈی جی اینٹی کرپشن گوہر نفیس نے کہاہے کہ گزشتہ2ماہ میں 15ارب 62کروڑ 50لاکھ روپے کی لینڈ ریکوری کی ہے،مسلم لیگ (ن)کے سابق ایم این اے عابد شیرعلی کے بہنوئی قیصر ادریس سے محکمہ جنگلات کی392کنال سرکاری زمین واگزار کرائی جس میں فارم ہاؤس بھی شامل ہے،اسی طرح پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق گورنر پنجاب سلمان تاثیر(مرحوم) کی اہلیہ آمنہ تاثیر کے قبضہ سے 77کنال سرکاری اراضی بھی واگزارکرائی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خلاف ان کا جہاد جاری رہے گا،وہ وزیراعظم کے ویژن پرعمل کرتے ہوئے پنجاب بھر میں سرکاری اراضی پر قبضہ مافیا کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤن جاری رکھے ہوئے ہیں،کرپشن فری پنجاب کیلئے وہ جدو جہد کر رہے ہیں اوراس کاخاتمہ کرکے ہی دم لیں گے۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،انہوں نے مزیدکہا کہ اینٹی کرپشن پنجاب نے ماہ ستمبر 2019 میں 6 ارب 90کروڑ روپے کی تاریخی ریکوری کی جس میں سے 4 کروڑ 25اکھ روپے کی ڈائریکٹ ریکوری ا 6ارب84 کروڑ روپے کی لینڈ ریکوری اور83لاکھ 30ہزار روپے کی ان ڈائریکٹ ریکوری شامل ہے،اسی طرح اینٹی کرپشن نے ایک ماہ میں 428انکوائریاں لگائیں، 491جاری انکوائریوں پر فیصلہ دیا اورمکمل چھان بین کے بعد 121 کیس رجسٹر کئے، 141 جاری کیسز کا فیصلہ کیا 58چالان پیش کیے 24 ریڈ کے اور154افراد کو گرفتار کیا۔ ڈی جی اینٹی کرپشن محمد گوہر نفیس نے تمام افسران کو ہدایت کی کہ وہ کرپٹ عناصر کے خلاف زیروٹالرنس پالیسی اپنائیں اور کسی بھی قسم کے دباؤ کو بالائے طاق رکھتے ہوئے بلاتفریق کارروائی کریں۔سی طرح اینٹی کرپشن نے ماہ اکتوبر میں 8 ارب 72کروڑ 50 لاکھ روپے کی تاریخی ریکوری کی ہے، اینٹی کرپشن نے ایک ماہ میں 6 کروڑ 80لاکھ روپے کی ڈائریکٹ ریکوری کی جبکہ ایک ماہ میں تقریبا 8ارب59 کروڑ60لاکھ روپے کی لینڈ ریکوری کی گئی ہے۔

انکوائریاں،ریکوری

مزید : صفحہ آخر