اثاثہ جات کیس،ایس ایس پی جنید ارشد کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

اثاثہ جات کیس،ایس ایس پی جنید ارشد کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

  



لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے آمدنی سے زائد اثاثہ جات کیس میں ایس ایس پی سید جنید ارشد کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12 روز کی توسیع کردی،عدالت نے ملزم کو26 نومبر کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیاہے،کیس کی سماعت شروع ہوئی تو نیب کے تفتیشی افسر نے عدالت کوبتایا کہ ملزم جنید ارشد، ماں اور باپ کے نام بے نامی دار جائیدادیں ہیں، جنیدارشد پٹرول پمپ اور متعدد پلاٹس کا بھی مالک ہے،جنیدارشد کے وکیل نے کہا کہ سابقہ بیوی نے ایف آئی اے اور نیب میں درخواستیں دیں کہ پٹرول پمپ والد کے نام ہے، والد کے نام 1988 ء میں 2 پلاٹ سی ڈی اے سے قرعہ اندازی میں نکلے تھے، والد کے اثاثہ جات بھی جنید ارشد کے کھاتے میں ڈال دیئے گئے، میرے موکل کے تمام اثاثہ جات ڈیکلئیئرڈ ہیں، 40 کروڑ روپے کا پٹرول پمپ والد صاحب نے ریٹائرمنٹ کے بعد بنایا تھا، جسے ایک سال بعد بیچ دیا گیا، بیوی کو اثاثہ جات کا علم تھا، اس نے نیب کو درخواست دے دی، نیب کی جانب سے مجھے کوئی نوٹس نہیں ملا،، کروڑوں روپے والی کوئی بینک ٹرانزیکشن میں نے نہیں کی، نیب کے تفتیشی افسر نے کہا کہ ملزم نے کروڑوں روپے کی بینک ٹرانزیکشنز کیں حالانکہ ان کی پوری سروس کی تنخواہ ایک کروڑ بھی نہیں ہو گی۔

، عدالت نے کیس کی مزید سماعت آئندہ پیشی تک ملتوی کرتے ہوئے ملزم کے جوڈیشل ریمانڈ میں مزید توسیع کردی۔

مزید : علاقائی