منشی ہسپتال کے 4لیب ٹیکنیشنز کے تبادلے کی سفارشات سیکرٹری ہیلتھ کو ارسال

منشی ہسپتال کے 4لیب ٹیکنیشنز کے تبادلے کی سفارشات سیکرٹری ہیلتھ کو ارسال

  



لاہور(پ ر)گورنمنٹ میاں منشی ہسپتال لاہورکے ایم۔ ایس کی طرف سے انکوائری کے بعد لیب ٹیکنیشنز کے تبادلوں کی سفارش، سینئر ڈاکٹرز پر مشتمل کمیٹی نے فرائض میں غفلت اور لاپرواہی کے الزامات ثابت ہونے پر ایم ایس کو چار لیب ٹیکنیشز کے فوری تبادلے کی سفارش کی تھی۔ تفصیلات کے مطابق ایم ایس نے فرائض میں غفلت برتنے والے مافیا کے خلاف رپورٹ ملنے پر کنسلٹنٹ سرجن ڈاکٹر شہباز اصغر اوپل،ڈاکٹر مبارک احمدسینئر میڈیکل آفیسر اور ڈاکٹر عمر فاروق کنسلٹنٹ ریڈلوجسٹ کنوینئر پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی تھی۔کمیٹی نے چاروں لیب ٹیکنیشنزکو کمیٹی کے سامنے پیش ہو کر اپنے موقف کی وضاحت دینے کے لیے کہا تھا مگر چاروں میں سے کوئی بھی کمیٹی کے سامنے پیش نہ ہوا جس پر کمیٹی نے سینئر آفیسر ز کی طرف سے لگائے گئے الزامات کی تحقیقات کے بعد مذکورہ لیب ٹیکنیشنز کو احکاما ت نہ ماننے، ڈیوٹی روسٹر کی پابندی نہ کرنے کے الزامات درست ثابت ہونے پر مذکورہ لیب ٹیکنیشنز کے ہسپتال سے فوری تبادلے کی سفارش کی تھی۔انکوائری کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں ایم ایس گورنمنٹ میاں منشی ہسپتال ڈاکٹر نور محمد نے چاروں لیب ٹیکنیشنز جاوید اختر بھٹی، عمران یونس،شبیر قیصر اور محمد رفیق کے تبادلے کے لیے اپنی سفارشات سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کو لکھ دی ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1