نواز شریف کا نام غیر مشروط طور پر ای سی ایل سے نکالنے پر لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ، مسلم لیگ ن کا موقف بھی آگیا

نواز شریف کا نام غیر مشروط طور پر ای سی ایل سے نکالنے پر لاہور ہائیکورٹ کا ...
نواز شریف کا نام غیر مشروط طور پر ای سی ایل سے نکالنے پر لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ، مسلم لیگ ن کا موقف بھی آگیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے ایک ایسے شخص کو کئی دنوں کے عدالتی عمل میں ڈالنا جس کیلئے 24 گھنٹے بھی اہم ہوں ، انتہائی غیر انسانی فعل ہے، حکومت کو نواز شریف کی زندگی سے نہیں بلکہ اپنی سیاست سے دلچسپی ہے۔

لاہور ہائیکورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ پاکستان کے صف اول کے قانونی ماہرین نے اپنی رائے کا کھل کا اظہار کیا تھا کہ حکومت نے ایک غیر قانونی شرط لگائی ہے۔ میں بھی وزیر داخلہ رہا ہوں اور ایسا کبھی نہیں ہوا کہ ای سی ایل سے نام ہٹانے کے معاملے پر عدالت کا کام خود سنبھالا ہو، مذہبی سفر اور علاج کیلئے لوگوں کو ایک دفعہ کی چھوٹ دی جاتی رہی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے اپنے ووٹرز کو خوش کرنے کیلئے یہ شرط لگائی ہے تو یہ انتہائی غیر انسانی فعل ہے، جس شخص کیلئے 24 گھنٹے بھی اہم ہوسکتے ہیں اس کو ہم نے کئی دنوں کے عدالتی عمل میں ڈال دیا ہے، عدلیہ نے صورتحال کی سنگینی کو سمجھا اورہفتے کو کیس کی سماعت مقرر کی ہے، ہم پر امید ہیں کہ کل نواز شریف کا نام ای سی ایل سے ہٹانے پر غیر قانونی شرط کے حوالے سے ریلیف ملے گا۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ عدالت میں حکومت نے جو موقف اپنایا ہے وہ اس بات کا ثبوت ہے کہ اس کو نواز شریف کی زندگی سے نہیں بلکہ اپنی سیاست سے دلچسپی ہے، یہ غیر انسانی رویوں کی حکومت ہے جس کی بنیاد نفرت اور انا کے بتوں پر رکھی گئی ہے۔

خیال رہے کہ لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی حکومت اور نیب کا موقف مسترد کرتے ہوئے نواز شریف کا نام غیر مشروط طور پر ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست کو قابل سماعت قرار دے دیا ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی