حکومت کس طرح سرپر بندوق رکھ کر سکیورٹی بانڈ لے رہی ہے ؟ محسن رانجھا کا سوال

حکومت کس طرح سرپر بندوق رکھ کر سکیورٹی بانڈ لے رہی ہے ؟ محسن رانجھا کا سوال
حکومت کس طرح سرپر بندوق رکھ کر سکیورٹی بانڈ لے رہی ہے ؟ محسن رانجھا کا سوال

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) ن لیگ کے رہنما محسن رانجھا نے کہاہے کہ یہ بیانیے کی بات نہیں ہے کہ جب قانون ایسی کوئی اجازت ہی نہیں دیتا تو حکومت کس طرح سرپر بندوق رکھ کر سکیورٹی بانڈ لے رہی ہے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”نیا پاکستان “میں گفتگو کرتے ہوئے محسن رانجھا نے کہا کہ توقع کہ عدالت میرٹ پر فیصلہ کرے گی ۔انہوں نے کہا کہ عدالت تو یہ بھی فیصلہ کرسکتی ہے کہ کہہ دے کہ حکومت نے یہ شرط درست نہیں رکھی لیکن یہ فیصلہ تو عدالت نے کرنا ہے ، ہم اس پر قبل ازوقت کچھ نہیں کہہ سکتے ۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی سزا معطل ہوچکی ہے ،نیب کوئی پلی بارگین کرے گی تو کورٹ میں لے کرجائے گی۔ا

محسن رانجھا کا کہنا تھا کہ عدالت کوئی سکیورٹی بانڈ مانگے تو یہ عدالت کامعاملہ ہے لیکن اگر حکومت سکیورٹی بانڈ مانگیں تو شہبازشریف کہیں گے کہ یہ اس کاغذ کواس طرح پیش کریں گے جس طر ح نواز شریف نے جرم کوتسلیم کرلیاہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ بیانیے کی بات نہیں ہے کہ جب قانون ایسی کوئی اجازت ہی نہیں دیتا تو حکومت کس طرح سرپر بندوق رکھ کر سکیورٹی بانڈ لے رہی ہے ؟

مزید : قومی