تجزیہ کار ایاز امیرنے حکومت کوفائدے کی بات بتادی

تجزیہ کار ایاز امیرنے حکومت کوفائدے کی بات بتادی
تجزیہ کار ایاز امیرنے حکومت کوفائدے کی بات بتادی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار ایاز امیر نے کہا ہے نواز شریف کا ملک سے باہر جاکر واپس نہ آنا حکومت کے لئے فائدے کا باعث ہے کیونکہ ان کو یہ بات کرنے کا موقع مل جائے گا کہ دیکھیں پہلے اسحاق ڈار ملک سے باہر چلے گئے ، نواز شریف کے بیٹے بھی چلے گئے اور اب خود بھی چلے گئے ہیں۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”تھنک ٹینک“میں گفتگو کرتے ہوئے ایاز امیر نے کہا کہ نواز شریف کا ملک سے باہر جاکر واپس نہ آنا حکومت کے لئے فائدے کا باعث ہے کیونکہ ان کو یہ بات کرنے کا موقع مل جائے گا کہ دیکھیں پہلے اسحاق ڈار ملک سے باہر چلے گئے ، نواز شریف کے بیٹے بھی چلے گئے اور اب خود بھی چلے گئے ہیں۔

ایاز امیر کا کہنا تھا کہ یا تو حکومت کہے کہ ہم نے نواز شریف کونہیں جانے دینا ، تھوڑ ا سادل ہو اور تھوڑی سے” وہ“ ہوکہ لیڈر شپ کیا ہوتی ہے ؟ ہم کو 22سال سے عمران خان یہ سبق سکھا رہے ہیں کہ لیڈر شپ کیا ہوتی ہے ؟ اب آپ جب اقتدار میں آئے ہیں جو کچھ آپ کی کوشش سے یا کچھ اندھیروں کی مہربانی سے تو آپ سے معاملات چلائے نہیں جارہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر فروغ نسیم اور بابر اعوان نے فیصلے کرنے ہے تو پھر اچھا ہے کہ عمران خان اقتدار سے دستبردار ہی ہوجائیں ۔ اگر فیصلے عدلیہ اور مہربانوں نے ہی کرنے ہے تو عمران خان وزیر اعظم کس بات کے ہیں؟

مزید : علاقائی /اسلام آباد