ہزار 684 ممبران سپریم کورٹ بار کے نئے عہدیداروں کا چناﺅ کرینگے

ہزار 684 ممبران سپریم کورٹ بار کے نئے عہدیداروں کا چناﺅ کرینگے

  

2                         لاہور(نامہ نگار خصوصی )سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے انتخابات کیلئے امیدواروں کی عبوری فہرست جاری کر دی گئی، 2 ہزار 684 ممبران 31اکتوبر کو سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے نئے عہدیداروں کا چناﺅ کریں گے ،انتخابی مہم زور پکڑ گئی ہے جبکہ پروفیشنل اور ڈیموکریٹس گروپس کی طرف سے اپنے اپنے امیدواروں کی کامیابی کے دعوے کئے جارہے ہیں۔سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے 31اکتوبر کو ہونے والے انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کی عبوری فہرست جاری کر دی گئی ہے ،عبوری فہرست کے مطابق سپریم کورٹ بار کے انتخابات میں پروفیشنل اور ڈیموکریٹس گروپس کے خیبر پختونخواہ سے تعلق رکھنے والے امیدوار حصہ لیں گے، پروفیشنل گروپ کی طرف سے صدرکی نشست کیلئے عبدالستار خان ایڈووکیٹ اور ڈیموکریٹس گروپ کے فضل حق عباسی امیدوار ہیں جبکہ سیکرٹری کیلئے پروفیشنل گروپ نے چودھری مقصود احمداور ڈیموکریٹس گروپ نے میاں اسلم پرویز کو امیدوار نامزد کیا ہے۔ ایڈیشنل سیکرٹری کی نشست کیلئے پروفیشنل گروپ کے ثناءاللہ زاہداور ڈیموکریٹس گروپ کے قاری عبدالرشید امیدوار ہیںجبکہ فنانس سیکرٹری کیلئے علی احمد رانا، قاضی شہریار اور سید انوار احمد امیدوار ہیں۔ نائب صدر پنجاب کیلئے پروفیشنل گروپ کے ذوالفقار بخاری اور ڈیموکریٹس کے شاہ عباس میاں ، نائب صدر بلوچستان کیلئے حبیب طاہر خان اور سید اقبال شاہ ، نائب صدر خیبرپختونخواہ کیلئے سید سردارحسین، جاوید نواز گنڈاپوراور طاہر فراز عباسی جبکہ نائب صدر سندھ کیلئے پروفیشنل گروپ کے صدیق مرزا، ڈیموکریٹس کے شبیر اعوان امیدوار ہیں۔عبوری فہرست کے مطابق سپریم کورٹ بار کی ممبر ایگزیکٹو کمیٹی کی 14نشستوں کیلئے 32امیدواروں میں مقابلہ ہوگا جس کیلئے پنجاب سے ممبر ایگزیکٹو کمیٹی کی نشستوں کیلئے 14امیدوار، سندھ اور خیبرپختونخواہ سے سات سات جبکہ بلوچستان سے ممبر ایگزیکٹو کمیٹی کی نشستوں پر چار امیدوار مقابلے میں ہیں۔ ہر صوبے سے دو ممبر ایگزیکٹو لازمی منتخب ہونگے، باقی چھ زیادہ ووٹ لینے والے ممبر ہونگے۔ سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے ملک بھر میں ووٹرز کی تعداد 2ہزار684ہے، سپریم کورٹ بار کے بلوچستان میں 155، خیبرپختونخواہ میں252سندھ میں426ووٹ ہیںجبکہ سپریم کورٹ بار کے بہاولپور میں 82،اسلام آباد میں 403، ملتان میں 180ووٹ ہیں، سپریم کورٹ بارکے سب سے زیادہ لاہور میں 1186رجسٹرڈ ووٹ ہیں۔ کسی بھی امیدوار کی کامیابی میں سپریم کورٹ کے لاہور کے وکلاءاہم کردار ادا کرینگے، پروفیشنل گروپ اور ڈیموکریٹس گروپس کی طرف سے اپنے اپنے امیدواروں کی جیت کے دعوی کئے جا رہے ہیں ۔

چناﺅ

مزید :

صفحہ آخر -