پنجاب بھر کی جیلوں میں سرچ آپریشن کا آغاز 20 سے زائد جیل حساس قرار دے دیئے گئے

پنجاب بھر کی جیلوں میں سرچ آپریشن کا آغاز 20 سے زائد جیل حساس قرار دے دیئے گئے

  

لاہور( کر ائم سیل)پنجاب بھر کی جیلوں میں ممکنہ دہشت گردی اور کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والوں کو چھڑوانے کے خدشے کے پیش نظر سرچ آپریشن شروع کردیا گیا ہے، اس سلسلے میں پنجاب کی بیس سے زائد جیلوں کو حساس قرار دیدیا گیاہے۔ ذرائع کے مطابق پنجاب کی دیگر جیلوں ملتان ،کوٹ لکھپت ،جھنگ ،فیصل آباد ،ٹوبہ ٹیک سنگھ ساہیوال میں افسران نے عملہ کے ہمراہ سرچ آپریشن شروع کردیا ۔قیدیوں کی بیرکوں ،چکی پر سخت چیکنگ کی گئی قیدیوں و حوالاتیوں کے سامان کو چیک کیا گیا جبکہ کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے بعض مبینہ دہشت گردوں کو محکمہ داخلہ پنجاب کی ہدایات پر خفیہ طور پر منتقل کرنے کیلئے جامع حکمت عملی تیار کی گئی ہے ،ایسے مبینہ دہشت گردوں کی جیل منتقلی کے دوران رینجرز کی بھی مدد حاصل کی جائے گی اور انکے روٹس پر سخت نگرانی کی جائے گی ۔سنٹرل جیل کوٹ لکھپت میں بند مبینہ دہشت گردوں کو ہائی سیکیورٹی زون بیرکوں میں منتقل کردیا گیا ہے جہاں انکی سخت نگرانی کی جارہی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب بھر کی حساس جیلوں کے باہر مقامی تھانوں کی پولیس رات گئے تک گشت کرے گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ جیل افسران نے بھی اپنی سکیورٹی میں اضافہ کردیا ہے ایلیٹ فورس کے جوان انکی سکیورٹی پر مامور کئے گئے ہیں ،جیلوں میں ممنونہ اشیاء کٹر ،بلیڈ ،چھری وغیرہ پر مکمل پابندی عائد کردی گئی ہے ۔پنجاب کی بعض جیلوں کی چھتوں پر سنائپرز تعینات کئے گئے ہیں ۔ اس سلسلے میں ڈی آئی جی جیل خانہ جات لاہور ریجن ملک مبشر نے بتایا کہ شہر کی کیمپ جیل اور سنٹرل جیل کوٹ لکھپت میں سکیورٹی سخت کردی گئی ہے سکیورٹی کے حوالے سے اہلکاروں اور افسران کو سختی سے ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ اپنی ڈیوٹی کو یقینی بنائیں غفلت لاپرواہی برتنے والوں کے خلاف سخت محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ 

مزید :

علاقائی -