دو ماہ بعد شاہراہ دستور سے کنٹینرز ہٹا دیئے گئے

دو ماہ بعد شاہراہ دستور سے کنٹینرز ہٹا دیئے گئے
دو ماہ بعد شاہراہ دستور سے کنٹینرز ہٹا دیئے گئے

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی ہدایت پر شاہراہ دستور سے کنٹینرز ہٹا دیئے گئے تاہم عوامی تحریک کے کارکنوں نے شاہراہ دستور پر اپنا ہی دستور نافذ کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق عوامی تحریک اور تحریک انصاف کے دھرنوں کے باعث حکومت نے اسلام آباد اور ریڈ زون کی حفاظت کے پیش نظر 80 سے زائد مقامات پر کنٹینرز لگا کر راستے بند کردیے تھے جس کے باعث عوام کو شدید مشکلات کا سامنا تھا تاہم وزیرداخلہ کی ہدایت پربدھ کے روز انتظامیہ نے پاک سیکرٹریٹ ،پی ٹی وی چوک،ریڈیو چوک،سرینا چوک،ایوب چوک اوردیگرعلاقوں سے کنٹینرز ہٹا دیے لیکن دھرنے کے شرکا کی سیکیورٹی کے لئے لگائے گئے کنٹینرز بدستور موجود ہیں۔

دوسری جانب عوامی تحریک کے کارکنوں نے شاہراہ دستور پر اپنی چوکی قائم کر رکھی ہے اور ہر آنے جانےوالے شخص کی تلاشی لی جارہی ہے، کارکنوں نے بدھ کو وہاں سے گزرنے والے تھانہ سہالہ کے انسپکٹر اصغرعلی کی گاڑی کو روکا اور شناخت کرائے جانے پر کارکنوں نے ان سے سرکاری پستول لے لیا۔ انسپکٹر نے بتایا کہ وہ سپریم کورٹ کی جانب جا رہاہے لیکن کارکنوں نے اس کا موقف سننے سے انکار کر دیا اوراسے سپریم کورٹ کے باہر چوکی سے اپنا پستول لینے کا کہہ کربھجوا دیا۔عوامی تحریک کے رہنما رحیق عباسی نے کارکنوں کی جانب سے قائم کردہ غیر قانونی چیک پوسٹ کے حوالے سے نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ انقلاب مارچ میں دہشت گردی کا خدشہ ہے جس کے پیش نظر اپنی مدد آپ کے تحت سیکیورٹی کو یقینی بنایا گیا ہے۔

مزید :

اسلام آباد -