برطانوی بینکار نے مسلمانوں کے خلاف تعصب کی بد ترین مثال قائم کر دی

برطانوی بینکار نے مسلمانوں کے خلاف تعصب کی بد ترین مثال قائم کر دی
برطانوی بینکار نے مسلمانوں کے خلاف تعصب کی بد ترین مثال قائم کر دی

  

گلاسگو (نیوز ڈیسک) اہل مغرب کی طرف سے اسلام اور مسلمانوں سے مخاصمت انتہا کو پہنچ رہی ہے اور اب مہذب اور شریف مسلمانوں کو روزانہ نفرت انگیز حملوںکا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ ایک ایسا ہی افسوسناک واقعہ سکاٹ لینڈ میں گلاسگو سے ایڈنبرا جانے والی ریل گاڑی میں پیش آیا جس پر خود مغربی شہری بھی شرمسار ہوگئے۔ فیلاہماچ نامی 33 سالہ مسلمان خاتون ریل گاڑی میں محو سفر تھی کہ اچانک ایک 43 سالہ شخص نے عقب سے ان پر حملہ کردیا اس کے سر کے دائیں طرف زور دار تھپڑا مارا اور بیہودہ گالیاں دینا شروع کردیں۔ نیل ڈوشیتری نامی حملہ آور ایک نمایاں سرمایہ کاری بینکار ہے اور اسکی شرمناک حرکت کو انتہائی افسوسناک قرار دیا جارہا ہے۔ اس نے خاتون کے ساتھ انتہائی بدزبانی کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے ملک واپس چلی جائے۔ جب ایک اور خاتون نے اسے روکنے کی کوشش کی تو وہ چلایا کہ مسلمان مقامی عورتوں کے ساتھ زیادتی کررہے ہیں اور عنقریب وہ مغربی ملکوں پر قبضہ کرلیں گے اور ہر طرف برقعے نظر آئیں گے۔ مسافروں نے اس کی ویڈیو اور تصاویر بنا کر پولیس کے حوالے کردیں جس پر اس بدمعاش شخص کو گرفتار کرلیا گی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -