کمپنیوں اور ڈیلرز نے114ادویات کی قیمتوں میں ازخود اضافہ کر دیا

کمپنیوں اور ڈیلرز نے114ادویات کی قیمتوں میں ازخود اضافہ کر دیا

  

لاہور(جاوید اقبال)صوبائی دارالحکومت میں ادویات کی قیمتیں بے قابو ہو گئی ہیں ایک مرتبہ پھر ادویہ ساز کمپنیوں اور ان کے ڈیلروں نے114 ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کر لیا ہے۔ان میں اکثریت جان بچانے میں اہم کردار ادا کرنے والی ادویا ت کی ہے۔سب سے زیادہ اضافہ شوگر اور ہارٹ اٹیک اور انسولین میں کیا گیا ہے جس کی قیمت 540سے580روپے کر دی گئی ہے جبکہ انسولین کی قیمت میں گزشتہ2ماہ کے دوران دو مرتبہ اضافہ کیا گیا ہے۔گزشتہ ماہ اس کی قیمت میں 65روپے اضافہ کیا گیا تھا۔اس طرح دو ماہ کے دوران انسولین اور ہیومولین 70/30 کی قیمت میں 105روپے فی وائل کا اضافہ کیا گیا ہے اس طرح شوگر کے مرض کی اہم ترین دوائی گیلوس میٹ کی تمام اقسام میں 200سے 275روپے فی ڈبہ (30گولیاں)اضافہ کیا گیا ہے۔اس دوائی کی تین اقسام ہیں جن میں گیلوس میٹ50/500میں 200روپے فی ڈبہ،50/850میں 235روپے فی ڈبہ،50/1000میں 275روپے فی ڈبہ اضافہ کیا گیا ہے اسی طرح شوگر کی ایک اور انسولین ہیومولین مکس 25کی قیمت بڑھانے کیلئے اہم ترین دوائی کو مارکیٹ سے غائب کر دیا گیا ہے جس کی وائل میں 300روپے اضافہ بتایا جا رہا ہے اس کی قیمت 3ہزار سے بڑھا کر 370روپے تک کی جا رہی ہے ۔اسی طرح انجائینا کے درد یعنی ہارٹ اٹیک کے وقت دی جانے والی واحد دوائی انجیسیڈ مارکیٹ سے غائب کر دی گئی ہے جس کی قیمت 25روپے ہے مگر مارکیٹ میں اس وقت بلیک میں 100روپے سے 225روپے مل رہی ہے۔بخار کی معمولی دوائی پینا ڈول کی قیمت 200روپے فی ڈبی (200گولیاں)200روپے سے بڑھا کر 250کر لی گئی ہیں۔گلہڑ کی واحد دوائی تھروکسن کی قیمت 25روپے فی 100گولیاں سے بڑھا کر2ماہ قبل 100روپے اب اس میں مزید 50روپے کا اضافہ کر لیا گیا ہے۔ہارٹ اٹیک کے وقت لگایا جانیوالا ٹیکہ سٹریپٹوکائی نیز کی قیمت 5200سے بڑھا کر5900کر لی گئی ہے۔اسی طرح دل کے امراض کی مخصوص ادویات لوپرین،لپیگٹ،کاڈورا،کارویڈا،لوپلیٹ سمیت دیگر تمام ادویات میں 5سے10فیصد اضافہ کر لیا گیا ہے۔بلڈ پریشر کی ادویات جسٹرل ،ایزی ڈے سمیت تمام ادویات کی قیمتوں میں 7فیصد اضافہ ہو اہے ہپٹائٹس کی ادویات میں 15فیصد تک اضافہ سامنے آیا ہے۔نوسفا نامی گولیوں کی قیمت میں 20فیصد اضافہ کیا گیا ہے اسی طرح ملٹی وٹامنز اور وٹامنز کے طور پر استعمال ہونے والی ادویات میں 25سے30فیصد اضافہ سامنے آیا ہے،کھانسی کے تمام شربتوں میں 7فیصد اضافہ،چھوٹے بچوں کیلئے ادویات پینا ڈول سے لے کر آگمنٹن سیرپ کی قیمتوں میں 5سے7فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے ۔زیادہ تر ادویات میں اضافہ کمپنیوں کے ڈسٹری بیوٹرز نے خود ہی کر لیا ہے اس حوالے سے مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق کا کہنا ہے کہ ادویات کی قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ کرنے والوں سے سختی سے نمٹیں گے ۔اس سلسلے میں تمام ڈرگ انسپکٹروں کو کریک ڈاؤن کا حکم جا ری کر دیا گیا ہے۔ایسے دکاندار یا ڈسٹری بیوٹرز جنہوں نے خود ساختہ اضافہ کر لیا گیا ہے ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -