ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال کرک میں’’ تبدیلی ‘‘کی جھلک دکھائی دینے لگی

ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال کرک میں’’ تبدیلی ‘‘کی جھلک دکھائی دینے لگی

  

کرک ( بیورورپورٹ) سالوں سے ویران ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال کرک میں’’ تبدیلی ‘‘کی جھلک دکھائی دینے لگی، ضلع ناظم ڈاکٹر عمر دراز کی خصوصی دلچسپی اور مہربانیوں سے مایوسیوں کے اندھیرے روشنیوں میں تبدیل ہونے لگے ،روٹھے عوام اور مریضوں کا اظہار اطمینان، رپیڈ ایکشن کے تحت کارڈیالوجی یونٹ کے اجراء کے بعد انتہائی نگہداشت ( آئی سی یو)یونٹ ایک ہفتے میں مریضوں کی سہولت کیلئے کھلوانے ، ایمرجنسی سمیت دیگر شعبوں میں اصلاحات لانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کا فیصلہ،پاور جنریٹر ، صفائی ، ناگزیر مرمتی اور تزئن و آرائش کیلئے ہسپتال کے ایم ایس کو ہدایات جاری کر دی گئیں ۔تفصیلات کے مطابق ضلع ناظم ڈاکٹر عمر دراز خٹک نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال کرک اور وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال کرک میں نمایاں اصلاحات لانے کے اپنے اعلان پر قائم رہتے ہوئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال میں علاج معالجے کی بہترین سہولیات مریضوں کو بہم پہنچانے پر اپنی تمام تر توجہ مرکوز کر رکھی ہے ، چند ہفتوں پر محیط نمایاں اقدامات کی وجہ سے سالوں سے سٹاف اور سہولیات سے کیلئے ترسنے والے مذکورہ ہسپتال کے تاریک وارڈز ، رہداریاں اور کمرے روشنیوں سے منور ہونے لگے ہیں علاج معالجے کی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے مایوس ہو کر ہسپتال چھوڑنے والے عوام اور مریض دوبارہ راغب ہو رہے ہیں صبح 11بجے تک بند رہنے والی او پی ڈی مقررہ وقت پر کھولتی ہے اور یہاں مریضوں ، سٹاف کی چہل پہل میں بھی روز بروز اضافہ ہو رہا ہے ضلع ناظم نے ڈسٹرکٹ گور نمنٹ فنڈ سے ہسپتال مذکورہ میں کارڈ یک کارنر یونٹ کے اجراء کے بعد آئی سی یو وارڈ کو ایک ہفتے میں کھلوانے پر تمام تر توجہ مرکوز کر رکھی ہے انہوں نے ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر طاہر بشیر الدین حلجی اور مقامی صحافیوں کے ہمراہ گذشتہ روز آئی سی یو وارڈ میں جاری کام سمیت ہسپتال کی ایمرجنسی یونٹ ، پتھا لوجی ، بلڈ بینک اور دیگر شعبوں کا معائنہ کیا ہسپتال میں مزید اصلاحات لانے کے حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جملہ شعبوں میں تعینات ڈاکٹرز اور سٹاف کی ڈیمانڈ زپورا کرتے ہوئے ہر حالت میں علاج معالجے کی جدید سہولیات فراہم کرونگا اور کہا کہ ہسپتال میں 18کروڑ روپے کی لاگت سے تیار ہونیوالی ٹراما سنٹراگلے سال مئی تک مکمل ہوگا جس سے کرک سمیت جنوبی اضلاع کے عوام نہ صرف مستفید ہونگے بلکہ پشاور اور دیگر دور دراز کے شہروں کے قائم ہسپتال تک جانے کی صورت میں اخراجات سے بھی نجات ملے گی انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال کرک کی ایمرجنسی یونٹ مزید فعال کرکے یہاں منی آپریشن تھیٹر بنوایا جا ئیگا مرد و خواتین کیلئے الگ الگ ایمرجنسی وارڈز ہونگے جس میں علاج معالجے کی جدید آلات نصب کرنے سمیت ایمرجنسی ادویات بھی فراہم کیئے جائینگے انہوں نے ہسپتال کو نان سٹا پ بجلی کی فراہمی کیلئے پاور یونٹ میں نصب دو جنریٹرز کا معائنہ کرتے ہوئے کہا کہ جملہ شعبوں کو بلدتعطل بجلی فراہم کرنے کیلئے اقدامات کیئے جا ئینگے انہوں نے ہسپتال کے ایم ایس کو ایمرجنسی اور دیگر شعبوں میں صفائی ، ناگزیر مرمتی اور تزئن و آرائش کا ٹاسک سپرد کرتے ہوئے قلیل مدت میں بہترین انتظامات پر ان کی تعریف بھی کی

مزید :

پشاورصفحہ آخر -