سوا سال جیل کاٹی ایک پائی کی کرپشن ثابت نہ ہو سکی، ضیاء اللہ آفریدی

سوا سال جیل کاٹی ایک پائی کی کرپشن ثابت نہ ہو سکی، ضیاء اللہ آفریدی

  

چارسدہ (بیورورپورٹ)سابق صوبائی وزیر معدنیات ضیا ء اللہ آفریدی نے کہا ہے کہ ناکردہ گناہ کے پاداش میں 15ماہ تک جیل میں بند رہا مگر میرے خلاف ایک پائی کی کرپشن ثابت نہ ہو سکی ۔ احتساب کمیشن کے چیئر مین جنرل حامد خان نے میرے علاوہ تحریک انصاف کے دیگر لوگوں کے خلاف بھی کرپشن اور بد عنوانی کے الزامات لگائے تھے مگر ابھی تک ان کے خلاف کاروا ئی سے اجتناب کیا جا رہا ہے ۔ صوبائی احتساب کمیشن نے نامز د ملزمان کے خلاف کاروائی نہ کی تو تحریک انصاف کے کارکن صوبائی احتساب کمیشن کے خلاف احتجاج کریگی۔وہ چارسدہ میں تحریک انصاف کے سابق ضلعی صدر عابد خان کی طرف سے دئیے گئے استقبالیہ سے خطاب کر رہے تھے ۔اس موقع پر طاہر خان عمرزئی اور عابد خان نے بھی خطاب کیاجبکہ تقریب میں پشاور کے منتخب بلدیاتی نمائندوں کامران بنگش، جہانزیب خان ، عرفان سلیم ، آصف خان ، گل زادہ ، محمد عرفان ، شیرین فرمان ، شیراز ، اور توصیف نے خصوصی طور پر شرکت کی ۔ تقریب سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے تحریک انصاف کے زیر عتاب سابق صوبائی وزیر معدنیات و ایم پی اے ضیا ء اللہ آفریدی نے کہا کہ عزت اور ذلت خالق کائنات کے ہاتھ میں ہے مجھے یقین تھا کہ خالق ضرور مجھے سر خرو کریگا۔ 15مہینے تک قید میں رکھ کرمخالفین میرے خلاف ایک بھی الزام ثابت نہ کر سکے جس کے بعد آزاد عدلیہ نے مجھے رہا کر دیا ۔جن لوگوں نے مجھے 15ماہ تک آسیر رکھا ان لوگوں کو میرے بچوں ، خاندان اور حلقے کے عوام کو ضرور جواب دینا ہو گا۔احتساب کمیشن کے چیئر مین جنرل حامد نے میرے علاوہ کئی دوسرے لوگوں پر بھی کرپشن اور بد عنوانی کے الزامات لگائے تھے مگر ان لوگوں کے خلاف کوئی کاروائی نہ کی گئی جس کی وجہ سے تحریک انصاف کے کارکنوں میں اشتعال ہے ۔ اگر صوبائی احتساب کمیشن نے اس حوالے سے کاروائی نہ کی تو جس طرح وفاقی حکومت کے خلاف تحریک انصاف کے کارکن سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں اسی طرح صوبائی احتساب کمیشن کے خلاف بھی کھڑے ہونگے ۔انہوں نے پارٹی کے چیئر مین عمران خان سے اپیل کی کہ کرپٹ عناصر کا احتساب کیا جائے ۔ انہوں نے کہاکہ صوبائی اسمبلی میں عوامی مفادات کے حوالے سے قانون سازی کا ساتھ دونگاکسی دوسرے پارٹی میں شمولیت کے حوالے سے قیاس آرائیاں درست نہیں ۔ صوبائی حکومت کی کارکردگی کے حوالے سے عوام اور میڈیا بہتر ین جج ہیں ۔امید ہے پارٹی رکنیت جلد بحال ہو جائیگی ۔ 30اکتوبر کو عمران خان کی کال پر اسلام آباد دھرنے میں بھر پور شرکت کرینگے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -