فاٹا کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ وہاں کے عوام کی مرضی سے کیا جائے ، فضل الرحمٰن

فاٹا کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ وہاں کے عوام کی مرضی سے کیا جائے ، فضل الرحمٰن

  

مردان (بیورورپورٹ) جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہاہے کہ فاٹا اصلاحات میں قبائلی عوام کے لئے باغی کالفظ استعمال کیاگیاہے ،جبر کی بنیاد پر فیصلے مسلط کرنے سے گریز کیاجائے اورفاٹا کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ وہاں کے عوام کی مرضی سے کیاجائے مدارس او رمساجد کی حرمت پر آنچ نہیں آنے دیں گے وہ مردان کے ریلوے گراؤنڈ میں مفتی محمود کانفرنس سے خطاب کررہے تھے کانفرنس سے پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل مولانا عبدالغفور حیدری اور ہاؤسنگ وتعمیرات کے وفاقی وزیر اکرم خان درانی سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا جے یو آئی کے سربراہ کاکہناتھاکہ فاٹا کے انصمام یا الگ صوبے کے حوالے سے ریفرنڈ م کیاجائے قبائلی عوام کی رائے شامل کئے بغیر کوئی فیصلہ قابل قبول نہیں ہوگا انہوں نے کہاکہ فاٹا اصلاحات کمیٹی نے قبائلیوں کے لئے باغی کا لفظ استعمال کیاہے حالانکہ قبائلی عوام 70سال سے پاکستان کے وفادار چلے آرہے ہیں انہوں نے کہاکہ قبائل عوام ان کی خواتین اور بچے دربہ درکی ٹھوکریں کھانے پر مجبورہیں ان کی بحالی کے لئے اقدامات نہیں مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہم حکومت کے ساتھ ہیں لیکن مساجد او رمدارس کو شہید کیاجارہاہے اوراس کی جگہ ووکیشنل کالج بناجارہے ہیں انہوں نے کہاکہ وہ یونیورسٹی اور کالجوں کے خلاف نہیں لیکن مساجد اورمدارس کی حرمت مسخ نہیں ہونے دیں گے مولانا فضل الرحمان کا کہناتھاکہ پاکستان پاکستانیوں کا ہے اورامریکہ ، مغرب اوریہودیوں کانہیں چلے گا ان کا جنازہ نکال کردم لیں گے مولانا کا مزید کہناتھاکہ اس وقت کشمیریوں کی نظریں پر مرکوزہیں مفتی محمود نے اپنے دور حکومت میں تاریخی اقداما ت اٹھائے تھے نظام مصطفی تحریک کامیابی سے ہمکنارکیا پوری قوم کی قیادت علمائے دین کی سپرد کرنی چاہیے انہوں نے کہاکہ آمریت کے خلاف جے یو آئی کی جدوجہد عیاں ہے مفتی محمود کے نقش قدم پر چل کر ہم عالم اسلام کی خدمت کے لئے کوشاں ہیں پاکستان میں اسلام کی نفاذ کی جدوجہد جاری ہے حسبہ بل ایم ایم اے حکومت کا کارنامہ ہے تاہم اس وقت کے ڈکٹیٹر پرویز مشرف او رچیف جسٹس نے نادیدہ قوتوں کا ساتھ دے کر اسے آئین کے ساتھ متصادم قراردیا مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ جے یو آئی آئندہ سال اپنی صد سالہ تقریبات منائے گی ہمارا قافلہ کامیابی سے اپنی منزل کی طرف رواں دواں ہے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -