وفاقی وزیر داخلہ فاٹا کیلئے موثر نادرا پالیسی بنائے،ملک نثار

وفاقی وزیر داخلہ فاٹا کیلئے موثر نادرا پالیسی بنائے،ملک نثار

  

مہمند ایجنسی (نمائندہ پاکستان) مہمند ایجنسی، وفاقی وزیر داخلہ فاٹا کیلئے موثر نادرا پالیسی بنائے۔ اکثر سنٹرز میں فیمل سٹاف نہ ہونے کی وجہ سے قبائلی خواتین کی پردہ داری متاثر ہوتی ہے۔ پیچیدہ طریقہ کار سے آئے روز رش میں اضافہ ہو رہا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ ن فاٹا کے رہنماء ملک نثار احمد حلیمزئی نے ایک اخباری بیان میں کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا میں آبادی کے نسبت شناختی کارڈ اجراء کی شرح مایوس کن حد تک کم ہے۔ جس کی وجہ قبائلی ایجنسیوں کے بیشتر نادرا سنٹرز میں کواتین سٹاف کی تعیناتی نہ ہونا اور موجودہ نادرا پالیسی کی پیچیدگی ہے۔ فیمل سٹاف نہ ہونے کی وجہ سے اکثر خواتین تا حال قومی شناختی کارڈ حاصل نہیں کر پا رہی ہیں کیونکہ غیر مرد سے تصویر بنانا اور فنگر پرنٹس لینے سے پردہ داری متاثر ہو جاتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ فاٹا کے خواتین ووٹ کے حق اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے امدادی پیکیج سے بھی محروم ہیں۔ جبکہ موجودہ نادرا سخت پالیسی کی وجہ سے فاٹا کے نادرا دفاتر میں آئے روز رش بڑھتا جا رہا ہے۔ اور شناختی کارڈ کے حصول کیلئے آنے والے مرد و خواتین سائلین کو فارم کیلئے کئی روز تک انتظار کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے مطالبہ کیا کہ فاٹا میں رسم و رواج کے مطابق نادرا پالیسی متعارف کرائی جائے جس سے قانونی تقاضے بھی پورے ہوں اور مرد و خواتین کو شناختی کارڈ جیسے بنیادی حقوق حاصل ہو۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -