پاکستان بے پناہ قربانیوں سے معرض وجود میں آیا، مولانا مخلص

پاکستان بے پناہ قربانیوں سے معرض وجود میں آیا، مولانا مخلص

  

صوابی( بیورورپورٹ)جمعیت علماء اسلام (نظریاتی)پاکستان کے مرکزی جنرل سیکرٹری اور سابقہ ایم این اے مولانا خلیل احمدمخلص نے کہا ہے کہ ملک کی آزادی میں مسلمانوں نے جس جذبہ سے حصہ لیا تھا۔ان کے پیچھے یہی عزائم تھے کہ اس ملک میں اسلام کا بول بالا ہوگا۔یہاں انصاف ہوگی ۔یہاں اسلام کے بنیادی عقائد ہونگے۔اور اس ملک میں کوئی کرپشن نہیں ہوگی۔ان خیالات کااظہار انہوں نے موضع زروبی میں حجرہ بوزرخیل میں ایک شمولیتی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔جس میں سابقہ کونسلر زروبی اور سماجی شخصیت عبدالکریم اور محمد زاہد نے اپنے خاندان اور ساتھیوں سمیت جمعیت علماء اسلام (نظریاتی)میں شمولیت کا اعلان کیا۔ مرکزی قائدین اور بے داغ سیاستدان مولانا خلیل احمدمخلص اورممتاز قانون دان نجیم خان ایڈوکیٹ کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا۔مولانا خلیل احمدمخلص نے کہا کہ آج ایک مخصوص لابی ملک کے جغرافیائی سرحدات کے حوالہ سے نرم گوشہ رکھتی ہے۔اوریہاں کے لیبرل اور سیکولر قوتیں اس ملک میں مادر پدر آزادی کے درپہ ہے۔اور ان ہی نظریات کی بنیاد پر اخلاقی اور مالی کرپشن کو غیب نہیں سمجھا جاتا ۔آج ملک کے سیاستدان نے ملک کو کرپشن کے راستے پر دیوالیہ حد تک پہنچایا ہے۔اور یہی وجہ ہے ۔کہ اس ملک میں عوام کے بنیادی سہولیات نہیں دی جاتی۔آج ملک میں بدامنی کی ایک بڑی وجہ عوام کو ان کے حقوق سے محرومی ہے۔ایک طبقہ جو ہمیشہ اس ملک پر حکمران چلے آرہے ہیں۔وہ اسمبلیوں میں بیٹھے ہیں اورجو بھی قانون سازی ہوتی ہے۔اُس میں اپنے اعراض کو مد نظر رکھے جاتی ہیں۔غیرت کے نام پر قتل کو اسمبلیوں میں بیٹھے لوگ جس نظر سے دیکھتے ہیں۔وہ غلط ہے۔اسلام نے جو احکامات دئیے ہیں۔اُس کی قانون سازی ہونی چاہیے ۔اجتماع سے جمعیت علماء اسلام (نظریاتی)ممتاز قانون دان نجیم خان ایڈوکیٹ ضلعی امیر مولانا سمیع الحق ضلعی جنرل سیکرٹری قاری عبدالرشید اور سابقہ ناظم ہملٹ جاوید خان نے خطاب کیا۔اس موقع پر نئے شامل ہونے والوں نے شرکاء کا شکریہ ادا کیا اور جمعیت علماء اسلام (نظریاتی)کے تنظیم کو اپنی مکمل تعاون کا یقین دلایا

مزید :

پشاورصفحہ آخر -