ٹرمپ پر ایک خاتون کیساتھ دوران پرواز دوسری پر لفٹ میں ناز یبا حرکات کا الزام

ٹرمپ پر ایک خاتون کیساتھ دوران پرواز دوسری پر لفٹ میں ناز یبا حرکات کا الزام

  

واشنگٹن (مانیڑرنگ ڈیسک ) امریکن صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کی نازیبا گفتگو ٹیپ کے بعد ایک اور سکینڈل منظر عام پر آگیا ٗ ری پبلکن امیدوار کے خلاف جنسی حملوں کی دو شکایات سامنے آئی ہیں ٗ ایک خاتون نے دوران پرواز اور دوسری نے لفٹ میں نازیبا حرکات کا الزام عائد کردیا ٗ نیویارک اور واشنگٹن میں خواتین کے حقوق کی تنظیموں کے ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مظاہرے ٗ مخالف امیدوار ہیلری کلنٹن کی مقبولیت مزید تین فیصد بڑھ گئی ٗ ڈونلڈ ٹرمپ کی صدارتی مہم کے لیے عطیات دینے والوں نے رقم کی واپسی کا مطالبہ ردیا جبکہ ڈونلڈ ٹرمپ نے خواتین کو متعدد بارجنسی طور پر حراساں کیے جانے سے متعلق خود پر لگے الزامات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے انھیں جھوٹ پر مبنی قرار دے دیا ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق ٹرمپ کے نازیبا گفتگو کی ٹیپ کی دھول ابھی بیٹھی نہیں تھی کہ ری پبلکن صدارتی امیدوار کاایک اور اسکینڈل سامنے آگیا۔ایک نہیں بلکہ دوامریکی خواتین نے ٹرمپ پرجنسی حملے کا الزام لگا دیا،امریکی اخبار نیویارک ٹائمزکے مطابق یہ دو خواتین جسیکالیڈزاورراشیل کروکس ہیں۔74سال کی جسیکالیڈزکا کہنا ہے کہ دوسر ے مباحثے میں ٹرمپ کوجھوٹ بولتے دیکھا تو دل چاہا مکا مار کر اسکرین توڑ دوں۔انہوں نے الزام لگایا کہ تیس سال پہلے ٹرمپ نے فضائی سفر کے دوران ان پر جنسی حملہ کیا، ٹرمپ ان کے برابر بیٹھے تھے، ٹرمپ نے اپنا تعارف کرایا، ہاتھ ملایا، پھرپرواز اڑنے کے 45منٹ بعد انہوں نے غیر اخلاقی حرکتیں شروع کر دیں،جسیکاکا کہنا ہے کہ وہ گھبرا کردوسری نشست پر بیٹھ گئیں۔ اخبار کے مطابق ایسا ہی دوسرا واقعہ 2005 میں 22سال کی ریسپشنسٹ راشیل کروکس کے ساتھ پیش آیا، جب ٹرمپ ٹاورکی لفٹ میں ان کی ملاقات ڈونلڈ ٹرمپ سے ہوئی، راشیل نے اپنا تعارف کرانے کے بعد ہاتھ ملانے کیلئے بڑھایا تو جواب میں ٹرمپ کا رد عمل انتہائی نا مناسب تھا، اس وقت انہیں اپنی بے قدری کااحساس ہوا۔اس سے پہلے ٹرمپ کی نازیبا حرکتوں کا نشانہ بننے والی سابق مس یوٹاہ ٹیمپل ٹیگرٹبھی ٹرمپ کے خلاف آواز اٹھا چکی ہیں،دوسری جانب ڈونلڈ ٹرمپ نیرپورٹ کو افسانہ قرار دے کر اخبار پر ہرجانے کیلئے دعوی دائر کرنے کی دھمکی دی ہے۔ دوسری جانب نیویارک اور واشنگٹن میں خواتین کے حقوق کی تنظیموں کے ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مظاہرے شروع کردیئے ہیں جس کے نتیجے میں مخالف امیدوار ہیلری کلنٹن کی مقبولیت مزید3 فیصد بڑھ گئی جبکہ ڈونلڈ ٹرمپ کی صدارتی مہم کیلئے عطیات دینے والوں کی جانب سے رقم کی واپسی کا مطالبہ بھی شروع کردیا گیا ہے جس کے باعث ڈونلڈ ٹرمپ کی مشکلات میں اضافہ ہوچکا ہے ۔ ادھر فلوریڈا میں اپنے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے ڈونلڈ ٹرمپ نے خواتین کی جانب سے اپنے اوپر لگائے گئے الزامات کی سختی سے تردید کردی ۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کی جانب سے ان پر لگائے جانے والے الزامات خوفناک حد تک جھوٹے اور حقیق سے کوسوں دور ہیں ۔انھوں نے کہا کہ میڈیا ان کی حریف ہیلری کلنٹن کی ملی بھگت سے یہ الزامات عائد کر رہا ہے۔اس سے قبل امریکی صدر باراک اوباما کی اہلیہ مشیل اوباما نے ہمپشائر میں اپنے خطاب میں عورتوں سے متعلق ٹرمپ کے عمل کے بارے میں کہا کہ یہ تذلیل پر مبنی اور قابلِ نفرت ہے۔ان کا کہنا تھا کہ رہنماؤں کو بنیادی انسانی شائستگی پر پورا اترنا چاہیے۔ واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے ایک ویڈیو افشا ہوئی تھی جس میں ٹرمپ کو عورتوں سے دست درازی کے بارے میں فحش کلمات ادا کرتے سنا جا سکتا ہے۔اس ویڈیو پر شدید تنقید کے بعد انھوں نے معافی مانگی تھی۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -