انڈوں کاعالمی دن منایا گیازکریا یونیورسٹی میں تقریب ، واک کااہتمام

انڈوں کاعالمی دن منایا گیازکریا یونیورسٹی میں تقریب ، واک کااہتمام

  

ملتان( سپیشل رپورٹر228سٹاف رپورٹر)پاکستان سمیت دنیا بھر میں گزشتہ روز انڈوں کاعالمی دن منایاگیا زکریا یونیورسٹی میں تقریب کا انعقاد واک کا اہتمام بھی کیاگیا تفصیل کے مطابق پاکستان سمیت دنیا بھر میں گزشتہ روز 14اکتوبر کو انڈوں کا عالمی دن منایا گیا اس موقع پرگفتگو کرترے ہوئے پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر وسیم رفیق ‘ممبر سی ای سی ڈاکٹر اظہر محمود ‘ڈاکٹر فیصل اور ڈاکٹر کوثر نے(بقیہ نمبر5صفحہ12پر )

کہا کہ پولٹری صنعت زراعت کے شعبوں میں سب سے منظم شعبہ ہے ‘گزشتہ کئی دہائیوں سے پاکستان جس غذائی بحران بالخصوص لحمیات کی شدید قلت کا شکار رہا ہے اس کمی پر قابو پانے کے لئے پولٹری کی مصنوعات نے ایک نمایاں کردار ادا کیا ہے۔اس وقت پولٹری انڈسٹری کل استعمال ہونے والے گوشت کا40فیصد حصہ مہیا کررہی ہے جو کہ گوشت اور پروٹین کا سب سے سستا ذریعہ ہے۔اس وقت پاکستان میں ایک سو ارب سالانہ انڈے پیدا کئے جارہے ہیں ‘لیکن ہمارے ملک میں فی کس انڈوں کا استعمال انتہائی کم ہے ڈبلیو ایچ او کے مطابق ایک فرد کو سال میں قریباً300انڈے کھانے چاہئیں۔دریں اثناء ترقی یافتہ اقوام کی صف میں کھڑے ہونے کے لیے ہمیں تحقیق کے میدان میں اپنی انفرادیت کو ثابت کرنا ہوگا.کیونکہ تحقیق ہی وہ عمل ہے جو معاشرے کی فلاح و بہبود میں بنیادی کردار ادا کرسکتی ہے.ان خیالات کا اظہار بہاء الدین زکریایونیورسٹی ملتان کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین نے بہاء الدین زکریایونیورسٹی ملتان فیکلٹی آف ویٹرنری سائنسز کے زیراہتمام ’’ورلڈ ایگ ڈے‘‘ کی تقریب میں کیا. انہو ں نے کہاکہ خطے میں انسانی خوراک کے بہترین ذرائع انڈا ، گوشت اور دودھ ہیں اور ان کا استعمال انسانی صحت کے لیے کافی فائدہ مند ہے. انہو ں نے کہاکہ ہمیں خوراک کی پیدوار میں خود کفیل ہوکر زائد خوراک ملک سے باہر بھجواکر زرمبادلہ کماسکتے ہیں .ڈین پروفیسر ڈاکٹر مسعود اختر نے انسانی صحت پر انڈے کے استعمال کے ثمرات کو اجاگر اور افادیت سے آگاہ کیا.آخر میں ایک واک کا بھی اہتمام کیاگیا . تقریب میں پروفیسر ڈاکٹر احسان الحق ، ڈاکٹر جمشید خان اورفیکلٹی کے تمام ممبران اور طلباء طالبات کی کثیر تعداد نے شرکت کی.

انڈہ عالمی دن

مزید :

ملتان صفحہ آخر -