چیف جسٹس کامیاں برادران کی بادشاہت کے متعلق بیان اہم ہے‘ سرائیکی رہنما

چیف جسٹس کامیاں برادران کی بادشاہت کے متعلق بیان اہم ہے‘ سرائیکی رہنما

  

ملتان (سٹی رپورٹر)نواز شریف کی بادشاہت سرائیکی خطے کی وجہ سے ہے ، آج سرائیکی صوبہ بن جائے ، کل بادشاہت ختم ہو جائے گی ۔ ان خیالات کااظہار سرائیکستان عوامی اتحاد کے رہنماؤں پروفیسر شوکت مغل ، عاشق بزدار اور ظہور دھریجہ ،محبوب تابش ، اطہر ماڑھا اور میاں علیم نے مشترکہ پریس (بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر عامر سہیل بھایا ، ذیشان مغل ، ملک تاشفین کھوکھر اور دوسرے موجود تھے ۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کا میاں برادران کی بادشاہت کے متعلق بیان اہمہے ، ہمارا مطالبہ ہے کہ سپریم کورٹ از خود نوٹس لیکر سرائیکی صوبہ بنوائے کہ سپریم آئین ساز ادارے سینٹ سے دو تہائی اکثریت سے سرائیکی صوبے کے بل کی منظوری کے بعد سرائیکی صوبے کو آئینی تحفظ حاصل ہو چکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تخت لاہور کی بادشاہی اس وقت تک ہے جب تک سرائیکی خطہ اس کے قبضہ میں ہے ، آج سرائیکی صوبہ بنے میاں برادران کی بادشاہت دھڑم سے نیچے آ گرے گی انہوں نے کہا کہ سرائیکی وسیب کو راہداری میں حق دیا جائے ، راہداری میں بہاول پور کو نظر انداز کرنے کی سخت مذمت کرتے ہیں ۔وسیب کے وکلاء تحریک کی بھر پور حمایت کرتے ہیں ، ججوں کی تعیناتی میں سرائیکی وسیب کوآبادی کے مطابق حصہ دیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح سندھ حکومت نے پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو سندھی پڑھانے کا پابندکیا ہے اسی طرح سرائیکی وسیب میں سرائیکی پڑھانے کے اقدامات کئے جائیں اور سندھ اسمبلی کی قرار داد کے مطابق پاکستانی زبانوں کو قومی زبان کا درجہ دیا جائے ۔ملتان کڈنی سنٹر اور سرکاری تعلیمی اداروں کی نجکاری کی مذمت کرتے ہیں ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -