فرائض کی ادائیگی میں کوتاہی برداشت نہیں کی جائیگی،سی ٹی او یوسف علی

فرائض کی ادائیگی میں کوتاہی برداشت نہیں کی جائیگی،سی ٹی او یوسف علی

  

راولپنڈی(جنرل رپورٹر )قائم مقام چیف ٹریفک آفیسر راولپنڈی یوسف علی شاہد نے سیکٹر انچارجز اور ڈیوٹی آفیسرز کو احکامات جاری کئے ہیں کہ فرائض کی ادائیگی میں کسی بھی قسم کی کوتاہی ، لاپرواہی، عد م توجہ ، غفلت اور نظم وضبط کی خلاف ورزی کرنے والے وارڈن افسران، متعلقہ سیکٹر کے ڈیوٹی آفیسرز اور سیکٹر انچارجز کے خلاف سخت محکمانہ ایکشن لیا جائے گا روزانہ کی بنیاد پر مختلف سیکٹرز کی ڈیوٹی کی اور ٹریفک انتظامات کے حوالے سے سرپرائز چیکنگ کی جائے گی ڈیوٹی میں غفلت کا مظاہرہ کرنے والے افسر وا ہلکار کے خلاف تحریری سخت محکمانہ ایکشن لیا جائے گا اس امر کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ٹریفک ہیڈ کوارٹرز میں احکامات جاری کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ جو وارڈ ن افسر کام نہ کرے تو متعلقہ سیکٹر انچارج اس کی سپیشل رپورٹ بنا کر بھیجے اور اچھے کام والے افسر و اہلکار کے لئے سرٹیفکیٹ دینے کی سفارشات بھیجی جائیں تاکہ کام والے اور محنتی بندے کی حوصلہ افزائی ہو انہوں نے کہا کہ ٹیم ورک کے ساتھ کام کریں احساس ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے آن گراؤنڈ شہریوں کو ٹریفک سہولیات سے آراستہ کریں محنت اور دلچسپی سے ڈیوٹی کے فرائض سرانجام دیں اچھا کام کر کے دکھائیں تاکہ آپ کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور انعام دیا جائے جو آپ کی آنے والی اگلی ترقی میں کام آئے گا انہوں نے کہا کہ اگر کام نہیں کریں گے تو پھر جرمانے کے ساتھ ساتھ سخت محکمانہ ایکشن بھی لیا جائے گا جس سے اس افسر و اہلکار کی عزت میں کمی ہونے کے ساتھ ساتھ اس کا سرکاری ریکار ڈ بھی خراب ہو گا انہوں نے کہا کہ شاہراؤں پر ٹریفک قوانین اورروڈ سیفٹی قوانین پرموثر انداز سے عمل درآمد کرواتے ہوئے شہر میں ٹریفک روانی کو ہر صورت برقرار رکھا جائے انسپکٹرز اپنے اپنے سیکٹر میں اپنی پوزیشن رش والے پوئنٹس پر رکھیں ڈیوٹی آفیسر بھی انسپکٹر کے ساتھ شانہ بشانہ فیلڈ ڈیوٹی پر توجہ دیں بیٹ انچارج موٹر سائیکل پر موونگ پوزیشن میں رہ کر غلط پارکنگ کے خلاف سخت ایکشن لیں ڈی ایس پیز اپنے اپنے سرکل کی چیکنگ کریں سڑکوں پر تجاوزات کے خلاف سخت ایکشن لیں تاکہ عوام الناس کو شاہراہوں پر مکمل ٹریفک سہولیات سے آراستہ کیا جا سکے کیونکہ ٹریفک پولیس کا اولین فرض شہریو ں کو ٹریفک قوانین کی پابندی کروانے کے ساتھ ساتھ آن گراؤنڈ ٹریفک سہولیات سے مستفید کرنا ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -