پاکستان مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عالمی اداروں پر مزید دباﺅ ڈالے : رہنما تحریک انصاف چودھری زاہد

پاکستان مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عالمی اداروں پر مزید دباﺅ ڈالے : رہنما تحریک ...
پاکستان مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عالمی اداروں پر مزید دباﺅ ڈالے : رہنما تحریک انصاف چودھری زاہد

  

لندن(عرفان الحق )تحریک انصاف کے رہنما چودھری زاہد نے کہا ہے کہ پاکستان کو مسئلہ کشمیر پر عالمی اداروں پر مزید دباﺅ ڈالنا ہو گا تاکہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کرے اور کشمیریوں کو ان کے حقوق دے ۔

روزنامہ پاکستان کو موصول تفصیلات کے مطابق مشرقی لندن میں منعقد ایک تقریب سے خطاب کر تے ہوئے انکا کہنا تھا کہ برطانیہ میں بسنے والی پاکستانی کمیونٹی پاکستان کی تعمیر و ترقی میں بڑا اہم کردار ادا کررہی ہے۔ بھارت کشمیر میں ظلم و ستم بند کرکے کشمیریوں کو ان کا حق دے۔ اورسیز پاکستانی ہر موقع پر وطن عزیز پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑے ہوتے ہیں۔

عمران خان کی اپوزیشن سے حکومت ۔۔۔۔۔پیپلز پارٹی نے ایسی بات کہہ دی جو عمران خان انکے بارے میں کہتے نہیں تھکتے

تقریب سے دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ برطانیہ میں رہنے والے پاکستانی برطانیہ کو بھی اپنا گھر سمجھتے ہیں اور یہاں پر ایک ذمہ دار شہری کے طور پر اپنی زندگیاں گذار رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ کی معیشت میں پاکستانی کمیونٹی کا بڑا اہم کردار ہے جبکہ دیگر شعبوں میں بھی پاکستانی کسی سے کم نہیں۔ مقررین نے حکومت پاکستان سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اورسیز پاکستانیوں کے حقوق کا ہر حال میں تحفظ کرے ۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

تقریب کا انعقاد معروف تاجر رہنما اعجاز خان اور چوہدری شاہد اختر نے کیا تھا جس میں پاکستان سے آئے ہوئے تحریک انصاف کے راہنما چوہدری زاہد کے علاوہ ورلڈ کانگریس فار اورسیز کے چیئرمین سید قمر رضا، یوکے پاکستان چیمبر آف کامرس کے چیئرمین امجد خان،بیرسٹر وحید الرحمان میاں،داو¿د مشہدی۔،چوہدری شوکت علی،فیصل خواجہ، چوہدری سکندر، کونسلر ندیم علی، چوہدری دلپزیر، کونسلر نتاشا شیخ اور عمر ملک کے علاوہ جنرل سیکرٹری پاکستان پریس کلب یوکے و یورپ نسیم صدیقی، انفارمیشن سیکرٹری عرفان الحق، سینئر صحافی اظہر جاوید، اکرام میر محمد سرور، آصف ڈار کے علاوہ دیگر افراد نے شرکت کی۔

بعدازاں اعجاز خان اور شاہد اختر نے تمام افراد کا شکریہ ادا کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسی محفلوں کا مقصد کمیونٹی کے مسائل سے آگاہی اور اس پر بحث کرنا ہے تاکہ مل جل کے ان کا حل نکالا جاسکے۔

مزید :

برطانیہ -