دنیا کی نایاب ترین وہیل پاکستانی سمندر میں دیکھی گئیں

دنیا کی نایاب ترین وہیل پاکستانی سمندر میں دیکھی گئیں
دنیا کی نایاب ترین وہیل پاکستانی سمندر میں دیکھی گئیں

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)  پاکستانی سمندری حدود میں چن کریک کے قریب دنیا کی نایاب ترین نسل ’’ہمپ بیک وہیل‘‘ کی 5 وہیل دیکھی گئی ہیں۔ 16 میٹر لمبی اور تقریباً 30,000 کلوگرام (30 ٹن) وزنی 5 عدد وہیل، کراچی سے 57 کلومیٹر دور چن کریک کے مقام پر ایک مقامی ماہی گیر جان بادشاہ نے سمندر میں گشت کرتے ہوئے دیکھیں اور اس منظر کو اپنے موبائل فون کے کیمرے کی آنکھ سے عکس بند کرلیا۔

پاکستان میں ورلڈ وائف فنڈ فار نیچر (ڈبلیو ڈبلیو ایف) کے ٹیکنیکل ایڈوائزر میرین فشریز، محمد معظم خان نے بتایا کہ پاکستان میں اس نسل کی وہیل کا دیکھا جانا خوش آئند ہے , ہمپ بیک  وہیل عام طورپر گہرے سمندر کے زیادہ گہرائی والے علاقوں میں پائی جاتی ہیں۔

واضح رہے کہ 2012 میں بھی اسی نسل کی 6 وہیل کو دیکھا گیا تھا؛ اور اس وقت دنیا میں ہمپ بیک وہیل کی تعداد صرف 82 رہ گئی ہے۔وہیل کو عام طور پر ’’مچھلی‘‘ لکھ دیا جاتا ہے جو غلط ہے کیونکہ وہیل کا شمار دودھ پلانے والے جانوروں (ممالیہ) میں ہوتا ہے جبکہ وہیل کے ارتقائی آبا و اجداد آج سے کروڑوں سال پہلے خشکی پر اُن علاقوں میں رہا کرتے تھے جو آج پاکستان کا حصہ ہیں۔

مزید :

کراچی -