عراق پھر لہو لہو ،مجلس میں خود کش دھماکہ ،34افراد جاں بحق ، 60سے زائد زخمی

عراق پھر لہو لہو ،مجلس میں خود کش دھماکہ ،34افراد جاں بحق ، 60سے زائد زخمی
عراق پھر لہو لہو ،مجلس میں خود کش دھماکہ ،34افراد جاں بحق ، 60سے زائد زخمی

  

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک) عراق کے دارالحکومت بغداد میں ہونے والے ایک خودکش دھماکے میں34 افراد جاں بحق  اور60سے زائد زخمی ہوگئے ہیں ۔

برطانوی خبر رساں ادارے ’’رائٹرز ‘‘اور دیگر غیر ملکی میڈیا کے مطابق واقعہ بغداد کے شمالی ضلع الشعب میں پیش آیا جہاں ایک پر ہجوم مارکیٹ میں ٹینٹ لگاکر محرم الحرام کی مناسبت سے مجلس جاری تھی اور وہاں بڑی تعداد میں لوگ موجود تھے جبکہ ایک مقامی شخص کی وفات پر تعزیت کے لیے بھی لوگ وہاں جمع تھے۔اطلاعات ہیں کہ حملہ آور نے اس وقت خود کش حملہ کیا جب کھانے کا وقت تھا اور زائرین کی بڑی تعداد وہاں جمع تھی ،پولیس اور طبی حکام نے بتایا کہ مجلس میں ایک خود کش بمبار داخل ہوا اور اس نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔حملے کی ذمہ داری تاحال کسی تنظیم نے قبول نہیں کی تاہم ماضی میں اس طرح کے حملوں کی ذمہ داری نام نہاد ’’دولت اسلامیہ داعش ‘‘قبول کرتی رہی ہے ۔دوسری طرف خیال رہے کہ شدت پسند تنظیم داعش کے کنٹرول میں مغربی اور شمالی عراق کے بیشتر علاقے ہیں، جن میں ملک کا اہم ترین شہر موصل بھی شامل ہے۔گذشتہ کچھ مہینوں سے امریکی فضائیہ اور فوجی مدد کے ذریعے عراقی فورسز نے داعش سے کچھ علاقے واپس لیے ہیں تاہم اس کے بعد داعش کی جانب سے عراقی شہروں میں خود کش دھماکوں کا ایک نیا سلسلہ شروع ہوگیا ہے جس میں اب تک ہزاروں افراد ہلاک اور زخمی ہوچکے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -