قدرتی آفات سے بچاؤ کیلئے ممکنہ خطرات کو کم کرنا اولین ترجیح، نعیم الحق

قدرتی آفات سے بچاؤ کیلئے ممکنہ خطرات کو کم کرنا اولین ترجیح، نعیم الحق

اسلام آباد(این این آئی)وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور نعیم الحق نے قدرتی آفات میں کمی کے عالمی دن کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ قدرتی آفات سے بچاؤ کے لیے ممکنہ خطرات کو کم کرنا اور ایک پائیدار ترقیاتی ڈھانچہ کا قیام پاکستان تحریک انصاف(بقیہ نمبر7صفحہ12پر )

کی موجودہ حکومت کی اولین ترجیحات میں سے ایک ہے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق ایک سر سبز اور موسمیاتی تبدیلیوں کے پیش نظر ایک مضبوط پاکستان کے قیام کے لیے کا م کا آغاز کر چکی ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ پائیدار ترقی کے حصول کے لیے عوام اور حکومت کو مل کر کا م کرنا ہو گا۔عوام میں اس حوالہ سے شعور اور آگاہی اجاگر کرنے کو وقت کی ضرورت قرار دیتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ این ڈی ایم اے کی طرف سے آج کا دن ایک عوامی تقریب کے طور پر منانا ایک خوش آئند عمل ہے ۔ اس سے قبل چیئرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل عمر محمود حیات نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان گذشتہ دو دہائیوں کے دوران قدرتی و ناگہانی آفات میں اپنے منصفانہ حصہ سے زیادہ متاثرہ خطہ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان قدرتی و دیگر آفات کے نتیجہ میں ہونے والے نقصانات کی بنیاد پر دس سب سے زیادہ متاثرہ ممالک میں سے ایک ہے ۔ چیئرمین این ڈی ایم اے نے عالمی برادری کے پاکستان میں قدرتی آفات کے دوران شاندار کردار کی تعریف کی کرتے ہوئے کہا کہ اس سال سے این ڈی ایم اے نے عالمی برادری کے ساتھ قدم سے قدم ملاتے ہوئے 13 اکتوبر کو انٹرنیشنل ڈے برائے ڈیزاسٹر ریڈکشن کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اُنہوں نے عوام کو اگاہ کیا کہ این ڈی ایم اے نے ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے حوالہ سے رد عمل پر مبنی پالیسی کی جگہ آفات کے خطرات کو پیشگی کم کرنے کے لیے ایک جامع لائحہ عمل متعارف کروایا ہے۔اس لائحہ عمل کو اپنا کر مستقبل میں کسی بھی آفت کی صورت میں قیمتی انسانی جانوں اور املاک کے تحفظ کو یقینی بنائے گا۔

نعیم الحق

مزید : ملتان صفحہ آخر