سیاسی قیمت کے بغیر غزہ کی ناکہ بندی کا خاتمہ چاہتے ہیں،اسماعیل ھنیہ

سیاسی قیمت کے بغیر غزہ کی ناکہ بندی کا خاتمہ چاہتے ہیں،اسماعیل ھنیہ

مقبوضہ غزہ (این این آئی)اسلامی تحریک مزاحمت حماس کے سیاسی شعبے کے سربراہ اسماعیل ھنیہ نے کہا ہے کہ ان کی جماعت نے قضیہ فلسطین کے لیے پانچ محاور پر کام شروع کیا ہے۔غزہ کی پٹی میں جنگ بندی کے لیے مختلف اطراف کوشاں ہیں۔ غزہ کی ناکہ بندی کسی سیاسی قیمت کی ادائی کے بغیر ختم کرنا چاہتیہیں۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسماعیل ھنیہ نے ان خیالات کا اظہار استنبول میں ہونے والی عالمی القدس کانفرنس سے ٹیلیفونک خطاب میں کیا۔ اس کانفرنس میں 900 عالمی شخصیات نے شرکت کی اور قضیہ فلسطین پر اپنے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔اسماعیل ھنیہ کاکہنا تھا کہ حماس کی اولین توجہ غزہ کی پٹی پر اسرائیل کی مسلط کردہ پابندیوں کا خاتمہ ہے۔ ہم کسی سیاسی قیمت کی ادائیگی کے بغیر غزہ کی ناکہ بندی ختم کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ برادر ملک مصر،قطر اور اقوام متحدہ غزہ کی پٹی میں امن کے قیام اور جنگ بندی کے لیے کوشاں ہیں۔ ناکہ بندی ختم کرنے کی شرط پر اسرائیل کے ساتھ جنگ بندی کی کوششیں جاری ہیں۔حماس رہ نما نے اس تاثر کی سختی سے نفی کہ غزہ میں جنگ بندی کی کوششیں صدی کی ڈیل کی سازشوں کا حصہ نہیں۔ ہم غزہ اور غرب اردن کو ایک جزو خیال کرتے ہیں۔ غزہ کے بغیر فلسطین نامکمل ہے

مزید : عالمی منظر