2 سالہ بچے نے ماں پر چاقو سے حملہ کردیا۔۔۔ آخر کیوں؟ انتہائی حیران کن خبر

2 سالہ بچے نے ماں پر چاقو سے حملہ کردیا۔۔۔ آخر کیوں؟ انتہائی حیران کن خبر
2 سالہ بچے نے ماں پر چاقو سے حملہ کردیا۔۔۔ آخر کیوں؟ انتہائی حیران کن خبر

  


لندن(نیوز ڈیسک)میاں بیوی کا جھگڑ اکوئی انہونی بات نہیں لیکن ایسی سفاکیت کم ہی دیکھنے میں آتی ہے کہ کوئی بدبخت شخص بیوی کے ساتھ جھگڑے میں بچے سے ماں پر تشدد کروائے، اور بچہ بھی اتنا چھوٹا کہ سن کر ہی انسان کا دل پریشان ہو جائے۔ انتہائی بدقسمتی کا یہ واقعہ برطانوی خاتون ایشلی واٹکنز کے ساتھ پیش آیا، جس کے خاوند ڈیوڈ گیفر نے اُن کے دو سالہ بیٹے کو مجبور کر دیا کہ وہ ماں کے جسم میں چاقو گھونپ دے۔

ایشلی کا کہنا ہے کہ جب ڈیوڈ اسے تشدد کا نشانہ بنا رہا تھا تو ساتھ کہہ رہا تھا ” میں تمہارے بیٹے کو تمہارے جسم میں چاقو اتارتے ہوئے دیکھنا چاہتا ہوں۔ “ ڈیوڈ کی اپنی ساس سے کچھ تلخی ہو گئی تھی جس پر ایشلی نے اُسے کہا کہ وہ کچھ وقت کے لئے گھر سے باہر چلا جائے۔ وہ ایک بار تو چلا گیا مگر شام کے وقت واپس آیا اور آتے ہی ایشلی کو تشدد کا نشانہ بنانہ شروع کر دیا۔

ایشلی نے بتایا کہ ” میں نے اسے کہا کہ تمہیں میری والدہ نے جو کچھ کہا ہے اس پر مجھے افسوس ہے لیکن اس نے مجھ پر چیخنا چلانا شروع کر دیا ۔ میں نے کہا کہ میں تمہارے ساتھ لڑائی نہیں کرنا چاہتی لیکن پہلے وہ باورچی خانے میں گیا اور برتن اُٹھا کر پھینکنے شروع کر دیئے ۔ پھر اس نے بھنے ہوئے گوشت کو اُٹھایا اور اسے دیوار پر دے مارا۔ میں خوفزدہ ہو کر بیڈ روم میں چلی گئی لیکن وہ بھاگتا ہوا میرے پیچھے آیا اور بری طرح مجھے پیٹنا شروع کر دیا ۔ میری بیٹے ایسن اور ڈیویان وہاں سوئے ہوئے تھے لیکن دیوڈ نے مجھے بیڈ روم میں بھی پیٹنا جاری رکھا جبکہ میں خوف سے چلا رہی تھی۔

اُس نے دو سالہ ایسن سے کہا کہ وہ جا کر باورچی خانے سے چاقو اُٹھا کر لائے۔ جب وہ چھوٹا چاقو لے کر آیا تو ایسن خود باورچی خانے میں گیا اور بڑا چاقو اُٹھا لیا۔ اُس نے چاقو ایسن کے ہاتھ میں دیتے ہوئے کہا کہ اسے اپنی ماں کے جسم میں گھونپ دو۔ جب اُس نے دیکھا کہ ایسن زور سے وار نہیں کر رہا تو خود چاقو میرے کندھے میں گھونپ دیا۔ اس نے میرے سر کے بال اُکھاڑ دیئے اور مار مار کر میرا سارا جسم لہولہان کر دیا۔ وہ مجھے زیادہ سے زیادہ تکلیف دینے کیلئے یہ سب کچھ کر رہا تھا۔ وہ چلا رہا تھا کہ ایسن تمہارا بیٹا نہیں ہے یہ میرا بیٹا ہے۔“

درندہ صفت ڈیوڈ ایشلی کو چار گھنٹ تک تشدد کا نشانہ بناتا رہا۔ یہ خوفناک سلسلہ بالآخر اُس وقت تھما جب ایشلی کی ایک سہیلی ان کے گھر آن پہنچی اور اُسی نے پولیس کو خبر کی جس کے نتیجے میں پولیس نے فوری کاروائی کرتے ہوئے بدبخت شخص کو گرفتار کر لیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس