ماتحت عدالتوں نے دہشتگردی کے مقدمہ کاجائزہ نہیں لیا،دہشتگردی کیس میں صلح کے معاملے پراہم فیصلہ دے چکے ،چیف جسٹس پاکستان کے دہشتگردی کے مقدمہ میں صلح سے متعلق کیس میں ریمارکس

ماتحت عدالتوں نے دہشتگردی کے مقدمہ کاجائزہ نہیں لیا،دہشتگردی کیس میں صلح کے ...
ماتحت عدالتوں نے دہشتگردی کے مقدمہ کاجائزہ نہیں لیا،دہشتگردی کیس میں صلح کے معاملے پراہم فیصلہ دے چکے ،چیف جسٹس پاکستان کے دہشتگردی کے مقدمہ میں صلح سے متعلق کیس میں ریمارکس

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے دہشتگردی کے مقدمہ میں صلح سے متعلق کیس میں سزائے موت کے قیدی کامعاملہ ٹرائل کورٹ کوبھجوا کرنمٹادیا، چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ماتحت عدالتوں نے دہشتگردی کے مقدمہ کاجائزہ نہیں لیا،دہشتگردی کیس میں صلح کے معاملے پراہم فیصلہ دے چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں دہشتگردی کے مقدمہ میں صلح سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی، دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ ماتحت عدالتوں نے دہشتگردی کے مقدمہ کاجائزہ نہیں لیا،دہشتگردی کیس میں صلح کے معاملے پراہم فیصلہ دے چکے ہیں، چیف جسٹس نے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا فیصلہ اس کیس پرلاگو نہیں ہوتا،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ کسی عدالت نے بھی صلح کوتسلیم نہیں کیا۔

عدالت نے کہا کہ ہم کیس کوواپس ٹرائل کورٹ بھیجتے ہیں،صلح نامہ تسلیم کرنے سے سزائے موت پرعمل رک جائےگا،ملزم سزا میں کمی کیلئے رحم کی اپیل کرسکتا ہے،عدالت نے سزائے موت کے قیدی کامعاملہ ٹرائل کورٹ کوبھجواکرنمٹادیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد