وہ ایک چیز جو حمل کے دوران خواتین کو ہرگز استعمال نہیں کرنی چاہیے، سائنسدانوں نے وارننگ دے دی

وہ ایک چیز جو حمل کے دوران خواتین کو ہرگز استعمال نہیں کرنی چاہیے، ...
وہ ایک چیز جو حمل کے دوران خواتین کو ہرگز استعمال نہیں کرنی چاہیے، سائنسدانوں نے وارننگ دے دی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) آج کے طرز زندگی میں چائے اور کافی کا چلن عام ہو چکا ہے لیکن اب سائنسدانوں نے کیفین کے حامل ان مشروبات کا حاملہ خواتین کے لیے ایک انتہائی سنگین نقصان بتا دیا ہے۔

میل آن لائن کے مطابق امریکہ کے نیشنل انسٹیٹیوٹس آف ہیلتھ کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ حاملہ خواتین کو چائے اور کافی وغیرہ کا استعمال ترک کر دینا چاہیے کیونکہ جو خواتین حمل کے دوران روزانہ 2کپ کافی پیتی ہیں ان کا حمل ضائع ہوجانے کا خطرہ بہت زیادہ ہو جاتا ہے۔ اس کے علاوہ جو خواتین ماں بننے کی کوشش کر رہی ہیں کیفین ان کے لیے بھی سخت نقصان دہ ہے۔ اس سے ان کے حاملہ ہونے کے امکانات بہت کم ہو جاتے ہیں۔

سائنسدانوں نے اس تحقیق میں 1200حاملہ خواتین پر تجربات کیے۔ رپورٹ میں سائنسدانوں کا کہناتھا کہ حاملہ خواتین کے جسم میں کیفین کی کوئی بھی مقدار ان کے پیٹ میں پرورش پاتے بچے کے لیے نقصان دہ ہے۔ اس میں کم یا زیادہ مقدار کا کوئی جھگڑا ہی نہیں۔ خاص طور پر یہ حمل کے پہلے 8ہفتوں میں انتہائی خطرناک ہوتی ہے۔ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ ڈاکٹر الیگزینڈرا پیورڈیوسمتھ کا کہنا تھا کہ ”اگر ماں بننے کی خواہش مند خواتین بھی کیفین کا استعمال چھوڑ دیں تواس سے انہیں حاملہ ہونے میں بہت مدد ملے گی۔“

مزید : تعلیم و صحت


loading...