پاکستانی نوجوان نے معروف کافی چین ’سٹار بکس‘ کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کردیا، ایسا کام کردیا کہ پوری دنیا میں دھوم مچ گئی

پاکستانی نوجوان نے معروف کافی چین ’سٹار بکس‘ کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کردیا، ...
پاکستانی نوجوان نے معروف کافی چین ’سٹار بکس‘ کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کردیا، ایسا کام کردیا کہ پوری دنیا میں دھوم مچ گئی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں مقیم ایک پاکستانی شہری نے گزشتہ دنوں انسانی ہمدردی کی ایسی مثال قائم کی ہے کہ پوری دنیا میں اس کی گونج سنائی دی۔

دی نیوز کے مطابق 30سالہ ساجد کاہلوں نامی یہ شخص 2013 ءمیں پاکستانی شہر گوجرہ سے برطانیہ گیا تھا اور اب برطانوی شہر ساﺅتھ اینڈ میں اس کے اپنے 6ریسٹورنٹس ہیں۔ ساجد کاہلوں چند روز قبل معروف کافی شاپ چین ’سٹاربکس‘ پر بیٹھا کھانا کھا رہا تھاکہ ایک بے گھر گورا لوگوں کے بچے ہوئے کھانے کی امید میں وہاں آ گیا۔ جب اسے بچا ہوا کھانا نہ ملا تو اس نے وہاں بیٹھے گاہکوں سے کھانا خرید کر دینے کی استدعا کی لیکن سب نے اسے نظرانداز کر دیا۔

ساجد کاہلوں دور بیٹھایہ ماجرا دیکھ رہا تھا۔ وہ اٹھا اور اس بے گھر شخص کے پاس گیا جس نے پھٹے پرانے کپڑے پہن رکھے تھے۔ اس نے اس شخص سے پوچھا کہ وہ کیا کھانا چاہتا ہے۔ چنانچہ اس کی پسند کا کھانا ساجد کاہلوں نے اسے خرید کر دیا جس کا بل 8.45پاﺅنڈ بنا۔ وہ شخص کھانا لے کر ہوٹل کے باہر نکلا اور باہر بیٹھنے کے لیے بنائی گئی جگہ پر بیٹھ کر کھانا کھانے لگا۔ ہوٹل کے سٹاف نے اسے وہاں بیٹھے دیکھا تو سٹاف کا ایک رکن ایک سکیورٹی گارڈ کو ساتھ لیے بھاگتے ہوئے وہاں پہنچا اور اسے وہاں سے نکل جانے کا حکم دے دیا۔

ساجد کاہلوں اندر بیٹھا یہ معاملہ دیکھ رہا تھا۔ وہ بھی فوراً باہر نکلا اور اس بے گھر شخص کے لیے ہوٹل کے سٹاف کے ساتھ جھگڑنے لگا۔ جب اس نے دیکھا کہ ہوٹل کا سٹاف اس بے گھر شخص کو وہاں سے نکالنے پر بضد تھا تو اس نے اپنا فون نکالا اور ویڈیو بنانی شروع کر دی۔

وہ ویڈیو سٹا ف کو کہہ رہا ہوتا ہے کہ ”اس کھانے کے تم نے پیسے لیے ہیں۔ اس نے یہ کھانا خریدا ہے چنانچہ وہ تمہارا گاہک ہے۔ وہ یہاں بیٹھ کر کھانا کھا سکتا ہے تم اسے روک نہیں سکتے۔“یہ ویڈیو ساجد کاہلوں نے سوشل میڈیا پر پوسٹ کر دی جو اس کی توقع کے برعکس جنگل کی آگ کی طرح پوری دنیا میں پھیل گی۔ امریکہ اور تمام یورپی ممالک کے مین سٹریم میڈیا نے وہ ویڈیو نشر کرنی شروع کر دی جس پر سٹاربکس کو دنیا بھر میں سبکی کا سامنا کرنا پڑا اور بالآخر اسے معافی مانگتے ہی بنی۔دوسری طرف ساجد کاہلوں کے اس انسان دوست اقدام کی دنیا بھر میں تعریف کی گئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس