خوف خدا اور اسوہ حسنہ پر عمل ہی مسائل کا حل ہے، رضوان صدیقی

  خوف خدا اور اسوہ حسنہ پر عمل ہی مسائل کا حل ہے، رضوان صدیقی

  

کراچی  (پ ر)امت مسلمہ کو درپیش مسائل اور مشکلات کا حل اللہ تعالیٰ کے خوف اور اسوہ حسنہ پر عمل کرنے میں پوشیدہ ہے۔ پاکستان میں فرقہ واریت اور صوبائی عصبیت پر قابو پانے کے لئے اسلامی تعلیمات اختیار کرنا ضروری ہے۔ ان خیالات کا اظہار رضوان صدیقی نے انجمن شیدائیان رسولﷺکے زیر اہتمام منعقدہ 31ویں سالانہ محفل نعت کے شرکاء  سے اپنے خطاب میں کیا۔ انہوں نے اپنی تقریر میں مزید کہا کہ کرونا کی وبا نے دنیا کے ترقی یافتہ ممالگ کی طرز زندگی کو تباہ اور تبدیل کر کے رکھ دیا۔ مگر اللہ تعالیٰ نے پاکستان کو اپنے محبوبﷺ کے صدقے محفوظ رکھا ہم پر فرض ہے کہ انفرادی اوراجتماعی طور پر اللہ کا شکر ادا کریں۔ محفل نعت میں صدیق اسماعیل، صبیح رحمانی، سعید ہاشمی، محمود الحسن اشرفی، فیصل نقشبندی، خاور نقشبندی، حافظ نعمان طاہر، ریحان قریشی، محمد شائق اور حیدرآباد کے عبدالرؤف نے بارگاہِ رسالت میں نعتوں کا نذرانہ پیش کیا جبکہ مختلف شعبہ حیات اور مکتبہ سے تعلق رکھنے والی شہر کی مختلف معروف شخصیات نے شرکت کی ان میں سینیٹر عبدالحسیب خان، سابق رکن قومی اسمبلی قمرالنساقمر، ڈاکٹر شاداب احسانی، صادق دہلوی، ڈاکٹر عمران یوسف، بیگم فرزانہ واثق، پروفیسر فائزہ احسان، ڈاکٹر حنا فضل، صفدر صدیق رضی، مبشر میر، اعزازالدین شاہ، طارق جمیل، نجم الدین شیخ، اسلم خان، نسیم شاہ، نہدیہ عدیل،زیڈ ایچ خرم، میجر کوثر کاظمی، راشد عزیز، مرتاض الدین صدیقی، اویس ادیب انصاری، عارف مصطفیٰ، عبدالباسط، زاہد جعفری، یاسر صدیقی، انیس مرچنٹ، مدیحہ میمن، شاہدہ عروج خان، ناہید عظمی، سعادت جعفری، کفیل احمد، فہیم برنی، غلام عارف خان، اشرف رشید، محمد محبوب، نثارقادری، زبیر فاروقی، سلطان خلیل، تنویر احمد، ریحان صدیقی، فاروق صدیقی، احمد اللہ قاسمی اور دیگر سینکڑوں مہمانوں نے شرکت کی۔

مزید :

صفحہ آخر -