چیف سیکریٹری سندھ کی زیر صدارت اربن ٹاون پلانرز کا اجلاس

  چیف سیکریٹری سندھ کی زیر صدارت اربن ٹاون پلانرز کا اجلاس

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ کی زیر صدارت ماہرین تعمیرات اور اربن ٹاون پلانرز کا اجلاس۔ اجلاس میں چیئرپرسن ہیریٹیج کمیٹی یاسمین لاری، انسٹیٹیوٹ آف آرکیٹیکچر کے صدر عارف چنگیزی، ڈین این ای ڈی محمد نعمان، حمیر سومرو، انجینیئر سہیل بشیر سمیت دیگر ٹاؤن پلانر سمیت سیکریٹری بلدیات نجم احمد شاہ اور ڈی جی ایس بی سی اے نے شریک کی۔ اجلاس میں ماسٹر پلاننگ، ٹرانسپورٹ اور ہیریٹیج عمارتوں سمیت شہر کے مختلف بڑے منصوبوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کہا کہ نے کہا کے صوبائی حکومت سول سوسائٹی کی مدد اور تعاون سے کراچی کو خوبصورت بنائے گی۔ انہونے مزید کہا کے ماسٹر پلان کے متعلق سول سوسائٹی اور ماہرین کی تجاویز کو مدنظر کھا جائے گا۔ چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے مزید کہا کہ کراچی میں کے فور، بی آر ٹی، سرکیولر ریلوے،کراچی واٹر اینڈ سیوریج امپرومینٹ، ملیر ایکسپریس وے سمیت کراچی میں مختلف منصوبوں پر کام کیا جا رہا ہے ان منصوبوں پر صوبائی حکومت، وفاقی حکومت اور ولڈ بینک کی فنڈنگ شامل ہے۔ انہونے مزید کہا کہ شہر میں کسی قسم کی غیر قانونی تعمیرات کی اجازت نہیں دی جائے گی اور تمام منظور شدہ عمارتوں کی تعمیرات کے دوران بورڈ لگا کر کیو آر کوڈ لگایا جائے گا۔ ممتاز علی شاہ نے مزید کہا کہ حکومت سندھ 17 شہروں کا ماسٹر پلان بنا رہی ہے 3 شہروں کا ماسٹر پلان مکمل ہے باقی 14 شہروں کا جون 2021 تک مکمل کیا جائے گا۔ چیف سیکریٹری سندھ نے ماہرین سے کراچی ماسٹر پلان کے لئے رائے طلب کرتے ہوئے کہا کہ تمام ماہرین کراچی شہر کے ماسٹر پلان کے لئے اپنے رائے دیں اور اس دوران انہونے محکمہ پلاننگ کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ اجلاس میں کراچی ماسٹر پلان پر بریفنگ دی جائے جس میں ماہرین سے بھی رائے لی جائے گی۔ انہونے  کہا کہ شہر کی ہیریٹیج عمارتوں کو بچانے کے لئے ماہرین حکومت کو تجویز پیش کرے۔ اجلاس میں ماہرین نے حکومت سندھ کو کراچی اربن پلاننگ میں مکمل تعاون کی یقین دہانے کروائی۔ انہونے کہا کہ کراچی کے تمام بڑے منصوبوں پر حکومت سندھ کو ماہرانہ رائے فراہم کی جائے گی۔ چیف سیکریٹری سندھ نے تمام ماہرین تعمیرات کو یقین دہانے کروائی کے  ماسٹر پلان کے متعلق سول سوسائٹی اور ماہرین کی تجاویز کو مدنظر کھا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -