وزیراعظم جمہوریت پسند بنیں، تھانے دار نہیں: ڈاکٹر نفیسہ شاہ 

  وزیراعظم جمہوریت پسند بنیں، تھانے دار نہیں: ڈاکٹر نفیسہ شاہ 

  

 کراچی (اسٹاف رپورٹر)پیپلز پارٹی کی مرکزی سیکرٹری اطلاعات ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے وزیراعظم کو ٹائیگر فورس کا ڈان قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ خاں صاحب جمہوری پسند بنیں، تھانے دار نہیں۔ نیب ایک کھوکھلا ادارہ بن چکا ہے، نیب ملک میں سیاسی انجینئرنگ بند کرے۔ عوامی مقدمے کی جنگ کے لئے آج سے ہم نکل پڑے ہیں، جلسوں سے قبل ہی حکومت کی ہوائیاں اڑ گئی ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو بلاول ہاؤس کراچی میں پلوشہ خان کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ عمران خان کے قول و فعل میں تضاد ہے، عمران خان کہاکرتے تھے کہ میرے خلاف لوگ نکلے تو استعفیٰ دے دونگا، آج پورا ملک سراپا احتجاج ہے، وزیراعظم فوری استعفیٰ دیں۔انہوں نے کہا کہ سیاسی موسم گرم ہورہاہے۔ہم جمہوریت اور عوام کا مقدمہ لڑرہے ہیں۔بلاول بھٹو 16اکتوبر کو لالہ موسی اور اس کے بعد گوجرانوالہ میں جلسوں سے خطاب کریں گے۔نفیسہ شاہ نے حکومت اپنے اوچھے ہتھکنڈے بند کرے۔شبلی فراز کہتے ہیں اجازت دے دی،اجازت دینے کے بعد  تھانے داروں والی حر کتیں بند کر یں۔پیپلزپارٹی گوجرانولہ کے صدر کے خلاف کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کا مقدمہ درج کیا گیا۔جب کورونا کم ہے اس کے باجود مقدمات بنارہے ہیں۔ٹرانسپورٹ کو روکا جارہا ہے۔کنٹینرکو روکا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ خود وزیراعظم نے وکلا کنونشن سے خطاب کیا جس کا عدالت نے بھی نوٹس لیا ہے۔وزیر اعظم کو قانو ن کا پتہ نہیں ہے۔نفیسہ شاہ نے کہا کہ ٹائیگر فورس  کے خلاف تاجربھی میدان میں آگئے ہیں۔یہ ٹائیگر فورس دوسر ی طالبان بن جائے گی۔ہم اس کے خلاف عدالت میں جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا جھگڑا ان سے ہے جو سازشیں کررہے ہیں۔ہمارا موقف کلیئر ہے ہمارا جھگڑا فوج سے نہیں۔جمہوری ایجنڈا ہے 26 نکاتی ایجنڈے سے کسی کو اختلاف نہیں۔ہم جمہوریت کو ڈی ریل نہیں کرنے دیں گے۔ہم جمہوری جدوجہد اور جلسے کررہے ہیں۔نہ نیب چلے گی نہ غدار گیریا۔سب کو علم ہے کہ بشیر میمن نے جب ہمارے خلاف کیس داخل کئے وہ کس کے کہنے پر داخل کئے۔ بشیر میمن کا آج کا موقف ہمارے موقف کی تائید بھی کرتا ہے۔اس ملک میں جمہوریت اور جمہوریت کے علمبردار ایک طرف ہیں۔قومی اسمبلی اور سینیٹ میں ہم نے حکومتی زیادتی کے قوانین کی مخالفت کی ہے۔اس وقت لگتا ہے پارلیمان میں ایک اور ٹائیگر فورس کو بٹھایا گیا ہے۔ ڈائیلاگ اور بحث مباحثے کو روکا جاتا ہے جس کی بنا پر ہمیں عوام کے پاس جانا پڑتا ہے۔نفیسہ شاہ نے کہا کہ آصف علی زرداری کی صحت کو خطرات ہیں۔پلوشہ خان نے کہا کہ پنجاب میں حکومتی زیادتی کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے۔عمران نیازی آپ کیا سمجھتے ہیں جس مشرف سے آپ نے سو سیٹوں کی بھیک مانگی وہ اور ضیا ہمارا کچھ نہ کرسکے آپ کیا کرسکیں گے۔جن لوگوں نے بھوک اور مشکل دیکھی اب ان کے پاس کچھ نہیں۔وہ اپنے کپڑوں کو علم بناکر نکلیں گے۔ڈی جی بٹ کی ڈھول کی تھاپ نہیں اس وقت بھوک ناچ رہی ہے۔دوسرے کے کندہوں پر بیٹھ کر ناچنے والے عمران نیازی عوام اب تنگ اور نکلنے کو تیار ہیں۔عمران نیازی نے اپنے حواریوں کو نوازنے کے لیے کنسٹرکشن اور مالز کھولے۔آج آپ کے اپنے آپ کو چور چور کہہ رہے ہیں۔ڈھائی تین سو ارب چینی چوری کرنے والوں کو باہر بھیج دیاگیا۔انہوں نے کہا کہ عوامی عدالت لگنے والی ہے آپ کو جواب دینا ہوگا۔

مزید :

صفحہ آخر -