چینی رپورٹ کی تحقیقات کیلئے نیب کی مشترکہ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل 

چینی رپورٹ کی تحقیقات کیلئے نیب کی مشترکہ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل 

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے چینی رپورٹ کی تحقیقات کیلئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دیدی۔ اس ٹیم نے اپنے شعبے کے ماہرین افراد کو شامل کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق چیئرمین جاوید اقبال کے زیر صدارت نیب ہیڈ کوارٹرز میں اہم اجلاس ہوا جس میں شوگر کمیشن رپورٹ اور مبینہ شوگر سبسڈی سکینڈل کا جائزہ لیا گیا۔ چیئرمین نیب نے ماہانہ اجلاس میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی ابتدائی رپورٹ پر اطمینان کا اظہار کیا۔اجلاس کے بعد جاری نیب اعلامیہ میں بتایا گیا کہ چینی رپور ٹ کی تحقیقات کیلئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے۔ اس مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں انویسٹی گیشز افسران، فنانشل ایکسپرٹ اور لیگل کنسلٹنٹ شامل ہیں۔ اس کے علاوہ شوگر انڈ سٹری کے معاملات کے بارے میں تجربہ رکھنے والے فرانزک ایکسپرٹ بھی ٹیم میں شامل ہیں۔چیئرمین نیب نے ہدایات کی کہ ٹیم تحقیقات کو شفاف، غیر جانبدارانہ اور میرٹ پر مکمل کرے۔ انہوں نے تمام صوبوں سے چینی سبسڈی سے متعلق تفصیلات معلوم کرنے کی بھی ہدایت کی۔چیئرمین نیب نے سیکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) سے شوگر کمپنیوں کی مالی اور آڈٹ رپورٹس بھی حاصل کرنے کا حکم دیا۔انہوں نے حکام کو ہدایت کہ چینی سبسڈی کی تحقیقات میں تمام افراد اور محکموں کو اپنی صفائی کا موقع فراہم کیا جائے۔ غیر قانونی طریقہ سے چینی سبسڈی وصول کرنیوالوں کیخلاف کارروائی کی جائے جبکہ شکایات کی جانچ پڑتال، انکوائریز اور انویسٹی گیشنز کو شواہد کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائے۔بدھ کو نیب ہیڈ کوارٹر ز میں قومی احتساب بیوروکے چیئرمین جسٹس (ر)جاوید اقبال کی زیر صدارت ہونیوالے اجلاس میں ڈپٹی چیئرمین نیب حسین اصغر، پراسیکوٹر جنرل نیب سید اصغر حیدر، ڈی جی آپریشن نیب ظاہر شاہ، ڈی جی نیب راولپنڈی عرفان نعیم منگی اور دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔ 

 نیب تحقیقاتی ٹیم 

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) قومی احتساب بیورو نے فراڈ، جعلسازی کے مقدمات کے 222 متاثرین میں 7 کروڑ 30 لاکھ روپے کی رقم تقسیم کر دی، ڈائریکٹر جنرل نیب راو لپنڈی نے ایک کروڑ کا چیک چیئرمین پی اے آ ر سی کے حوالے کیا۔نیب اعلامیہ کے مطابق این ٹی ایس فنڈز خورد برد کیس میں ایک کروڑ 87 لاکھ روپے برآمد کیے گئے جبکہ قومی احتساب بیورو نے نہال خان کیخلاف ریفرنس میں 138 متاثرین میں ایک کروڑ 47 لاکھ برآمد کیے۔ڈی جی نیب راولپنڈی کا کہنا ہے کہ فراڈ اور دھوکہ دہی سے لوگوں کو ان کی محنت کی کمائی سے محروم کیا جاتا ہے، اسلامی کاروبار اور ناموں کے ذریعے سادہ لوح عوام کو دھوکا دیا جا تا ہے، جعلی ہاؤسنگ سوسائٹی کے ذریعے دھوکہ دہی سے لوگوں کو لوٹا جا رہا ہے۔

نیب رقم تقسیم

مزید :

صفحہ اول -